پاک چین جوائنٹ چیمبر کے تحت متعدد منصوبوں پر عملدرآمد متوقع ہے، ژہاؤ لی جیان

پاک چین جوائنٹ چیمبر کے تحت متعدد منصوبوں پر عملدرآمد متوقع ہے، ژہاؤ لی جیان

لاہور ( این این آئی)چینی سفارتخانے کے ناظم الامور (چار ج ڈی افیئر ) مسٹر ژہاؤ لی جیان نے کہا ہے کہ پاکستان اور چین کے درمیان موثر ابلاغ کی راہ میں حائل رکاوٹوں کو دور کرنے کے سلسلے میں پاک چین جوائنٹ چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کی کاوشیں دونوں ملکو ں کے عوام کو قریب تر لانے میں اہم کردار انجام دی رہی ہیں۔ یہ بات انہوں نے پاک چائنہ جوائنٹ چیمبر کے صدر ایس ایم نوید اور سیکرٹری جنرل صلاح الدین حنیف کے ساتھ ایک ملاقات کے دوران کہی۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں چینی زبان سیکھنے کی تحریک کا بانی پاک چین جوائنت چیمبر ہی ہے اور اس چیمبر کے زیر اہتمام چینی زبان کی پہلی ڈکشنری اور چینی سیکھنے سے متعلق مستند کتاب کی اشاعت، پاک چین دوستی میں سنگ میل کی حیثیت رکھتی ہے۔ مسٹر ژہاؤ نے کہا کہ چینی زبان سیکھنے سے متعلق پاک چین جوائنٹ چیمبر کے تحت شروع ہونے والا سلسلہ اب پاکستان بھر میں پھیل چکا ہے اور انہیں خوشی ہے کہ اب بہت سی یونیورسٹیوں نے چینی زبان کے شعبہ جات بھی قائم کر دئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاک چین جوائنٹ چیمبر کے تحت تجارتی وفود کے تبادلو ں مختلف کاروباری اور صنعتی شعبوں میں مشترکہ سرمایہ کاری کے متعدد منصوبوں پر عملدرآمد بہت جلد متوقع ہے۔اس موقع پرپاک چین جوائینٹ چیمبر کے صدر ایس ایم نوید نے چینی سفارتخانے کے ناظم الامور کو بتا یا کہ پاک چین جوائینٹ چیمبر کی بنیاد چین اور پاکستان کے درمیان صنعتی و تجارتی شعبوں میں موجود امکانات سے استفادہ کیلئے رکھی گئی تھی۔لیکن ہم نے اس سلسلے میں زبان ایک رکاوٹ محسوس کیا اور دوطرفہ اقتصادی تعلقات کے فروغ کے ساتھ ساتھ زبان کی رکاوٹ کے مسئلے کو دور کرنے کیلئے بھی حکمت عملی وضع کی جس پر عملدرآمد سے چین اور پاکستان کے درمیان تجارتی تعلقات کے فروغ کا عمل آسان اور تیز ہو گیا ہے۔

چینی ناظم الامور

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر