’چینی فوج اس ملک پر حملے کی تیاری کررہی ہے‘ انتہائی خطرناک دعویٰ سامنے آگیا، یہ ملک شمالی کوریا نہیں بلکہ۔۔۔

’چینی فوج اس ملک پر حملے کی تیاری کررہی ہے‘ انتہائی خطرناک دعویٰ سامنے ...
’چینی فوج اس ملک پر حملے کی تیاری کررہی ہے‘ انتہائی خطرناک دعویٰ سامنے آگیا، یہ ملک شمالی کوریا نہیں بلکہ۔۔۔

  


بیجنگ(مانیٹرنگ ڈیسک)ایک ایسے وقت پر کہ جب دنیا بحیرہ جنوبی چین میں امریکہ اور چین کے ممکنہ تصادم کے بارے میں سوچ رہی تھی ،حیران کن طور پر یہ دعوٰی سامنے آگیا ہے کہ چین تائیوان پر حملے کی تیاری کررہا ہے۔

ساﺅتھ چائنہ مارننگ پوسٹ کے مطابق اتوار کے روز چین کی پیپلز لبریشن آرمی کی جانب سے ایک ویڈیو جاری کی گئی ہے جس میں چین کا ایک H-6 بمبار طیارہ اور اس کے ساتھ SU-30فائٹر طیارے تائیوانی جزیرے کے قریب پٹرولنگ کرتے نظر آتے ہیں۔ اس سے ایک ہفتہ قبل ہی چینی جنگی جہازوں کی تائیوان کے قریب مشقوں کی ویڈیو بھی سامنے آئی تھی۔

مکاﺅ سے تعلق رکھنے والے عسکری تجزیہ کار انٹونی وانگ ڈونگ نے ان مشقوں کے بارے میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا ”تائیوانی جزیرے کے اردگرد کی جانے والی مشقیں ایک غیر معمولی بات ہے۔ یہ عملی اور انتہائی زبردست منصوبہ بندی کے ساتھ کی جانے والی مشقیں ہیں جن کا ایک بڑا مقصد ملٹری انٹیلی جنس کا حصول ہے۔ اس سے پہلے یہ مشقیں صرف علامتی ہوتی تھیں لیکن اس بار یہ عملی نوعیت کی ہیں۔ چین اپنے سرویلنس طیارے بھی اس علاقے میں بھیج رہا ہے جبکہ جنگی طیارے بھی مشقوں میں مصروف ہیں۔ یہ صورتحال اشارہ دے رہی ہے کہ آنے والے دنوں میں کچھ ہونے والا ہے۔

بھارت نے براہموس سپر سانک کروز میزائل ’’ فورٹی سخوئی ‘‘طیاروں میں ضم کرنے کے پراجیکٹ پر کام شروع کردیا

چین کے TU-154 طیارے بھی تائیوانی جزیرے کے اردگرد پرواز کررہے ہیں۔ ان طیاروں میں سنتھیٹک اپرچر راڈار نصب ہے جو تائیوان کے تمام فوجی اڈوں کی معلومات حاصل کرسکتا ہے۔ یہ معلومات اس حوالے سے بہت اہم ہوں گی کہ اگر چین تائیوان پر حملہ کرتا ہے تو اس کے پاس تمام فوجی اڈوں کا نقشہ اور ان کی صلاحیت کی تفصیلات موجود ہوں گی۔“

یاد رہے کہ چینی خانہ جنگی کے اختتام پر ماﺅزے تنگ کی کمیونسٹ افواج سے شکست کھانے کے بعد ان کے مخالف شیانگ کائی شیک 1949 میں تائیوانی جزیرے کی جانب فرار ہوگئے تھے۔ اس وقت سے ہی چین اس جزیرے کو اپنی ریاست کا حصہ قرار دیتا ہے اور کبھی اس بات کو خارج از امکان قرار نہیں دیا کہ عسکری طاقت سے اس پر قبضہ کیا جاسکتا ہے۔ یہ جزیرہ بحرالکاہل تک چین کی رسائی کے راستے میں پڑتا ہے اور اس حوالے سے بھی چین کے لئے سٹریٹجک اہمیت رکھتا ہے۔

لائیو ٹی وی پروگرامز، اپنی پسند کے ٹی وی چینل کی نشریات ابھی لائیو دیکھنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

مزید : بین الاقوامی