منی لانڈرنگ سکینڈل ، آصف زرداری فریال تالپور کا نام بھی آگیا ، ممکنہ گرفتاری پر پی پی کا تحریک چلانے کا فیصلہ

منی لانڈرنگ سکینڈل ، آصف زرداری فریال تالپور کا نام بھی آگیا ، ممکنہ گرفتاری ...

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک ) سپریم کورٹ میں جمع کرائی گئی جے آئی ٹی کی رپورٹ میں اومنی گروپ کے انور مجید اور اے جی مجید کو مرکزی ملزم قرار دیدیا گیا، سندھ کی اہم شخصیت نے اربوں روپے جاری کروائے، حسین لوائی سمیت 30 بینکرز کے نام بھی شامل ہیں۔تفصیلات کے مطابق منی لانڈرنگ سکینڈل میں جوائنٹ انوسٹی گیشن ٹیم (جے آئی ٹی) نے رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع کرا دی ہے جس میں اومنی گر و پ کے انور مجید اور اے جی مجید کو مرکزی ملزم قرار دیا گیا ہے، دنیا نیوز ذرائع کے مطابق رپورٹ میں سابق صدر آصف زرداری اور ان کی ہمشیرہ فریال تالپور کا نام بھی شامل ہے۔جے آئی ٹی رپورٹ میں بیمار صنعتوں کی بحالی کے نام پر اربوں روپے دینے پر سندھ حکومت کی اہم شخصیت کا نام بھی شامل ہیں جبکہ سندھ حکومت کے دو درجن افسران کے نام بھی فہرست کا حصہ ہیں۔حسین لوائی سمیت تیس بینکرز کے نام بھی منی لانڈرنگ رپورٹ میں موجود ہیں اور جعلی اکاؤنٹس میں رقم جمع کرانیوالے 20 ٹھیکیداروں کا بھی رپورٹ میں ذکر ہے ۔ اد ھر د و سر ی طرف ذرائع کا کہنا ہے پیپلز پارٹی کے اہم مشاورتی اجلاس میں آصف زرداری کی گرفتاری کی صورت میں پارٹی حکمت عملی طے کر لی گئی ہے، آصف زرداری کی گرفتاری کی صورت میں حکومت کو ٹف ٹائم دینے اورملک بھر میں احتجاجی تحریک چلانے کا فیصلہ کیا گیا ہے جبکہ سینئر رہنماوں نے حکومت کیخلاف عدم اعتماد کی تحریک لانے کی تجویز بھی دی ہے اور اس سلسلہ میں دیگر جماعتوں سے بھی مشاور ت کی جائے ۔ ذ رائع کے مطابق حکومت کیخلاف تحریک لانے کا معاملہ سی ای سی کے اجلاس کے ایجنڈے میں شامل کرنے کا امکان ہے جبکہ آصف زرداری کی گرفتاری کی صورت میں بینظیر بھٹو کی بہن صنم بھٹو کو میدان میں اتارنے کی بھی تجویز زیر غور ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ صنم اس وقت پا کستا ن میں موجود ہیں، وہ ہی آصف زرداری کی گرفتاری کی صورت میں احتجاجی تحریک کو لیڈ کریں گی۔

منی لانڈرنگ سکینڈل

مزید : صفحہ اول