”جنرل باجوہ پہلی بار یو اے ای گئے تووہاں کے حکمرانوں نے بڑی مشکل سے ملاقات کا وقت دیا کیونکہ ۔۔۔ “ بڑا انکشاف سامنے آگیا

”جنرل باجوہ پہلی بار یو اے ای گئے تووہاں کے حکمرانوں نے بڑی مشکل سے ملاقات کا ...
”جنرل باجوہ پہلی بار یو اے ای گئے تووہاں کے حکمرانوں نے بڑی مشکل سے ملاقات کا وقت دیا کیونکہ ۔۔۔ “ بڑا انکشاف سامنے آگیا

  


لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن)لیفٹیننٹ جنرل (ر) غلام مصطفیٰ کا کہنا ہے کہ جنرل باجوہ پہلی بار یو اے ای گئے تو انہیں بڑی مشکل سے آدھے گھنٹے کی ملاقات کا وقت دیا گیا اور پیچھے کے دروازے سے لے جایا گیا لیکن ان کی یہ ملاقات ساڑھے تین گھنٹے تک جاری رہی۔

نجی ٹی وی کے پروگرام میں جنرل (ر) غلام مصطفیٰ نے پاکستان کی خارجہ پالیسی کے حوالے سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ہمارے تعلقات یو اے ای کے ساتھ مثالی نہیں تھے۔ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ جب پہلی بار متحدہ عرب امارات (یو اے ای ) گئے تو وہاں کے حکمرانوں نے انہیں بہت تاخیر سے ملاقات کا وقت دیا ۔ یو اے ای کے حکمرانوں نے جنرل باجوہ کو ملاقات کیلئے صرف آدھے گھنٹے کا وقت دیا اور انہیں پیچھے کے راستے سے لے جایا گیا۔

انہوں نے بتایا کہ جنرل باجوہ کی ملاقات آدھے گھنٹے کی ہونی تھی لیکن وہ ملاقات ساڑھے تین گھنٹے تک جاری رہی جس دوران یو اے ای کی ٹاپ لیڈر شپ موجود رہی۔ جب یہ ملاقات ختم ہوئی تو جنرل قمر جاوید باجوہ کو صدر دروازے سے باہر لایا گیا جو کہ ان کی پاکستان کیلئے بڑی اچیومنٹ تھی۔ اس ملاقات کے بعد ہمارے یو اے ای کے ساتھ تعلقات بہتر ہورہے ہیں۔

مزید : قومی