ہائیکورٹ کے ڈویثرن نے بنچ نے پاسکوکوچاروں صوبوں میں گندم کی ترسیل اور فروخت کی اجازت دےدی

ہائیکورٹ کے ڈویثرن نے بنچ نے پاسکوکوچاروں صوبوں میں گندم کی ترسیل اور فروخت ...

                             لاہور(نام نگار خصوصی) چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ مسٹر جسٹس عمر عطا بندیال اور جسٹس عائشہ اے ملک پر مشتمل ڈویژن بنچ نے عدالت عالیہ کے سنگل بنچ کا فیصلہ معطل کرتے ہوئے ”پاسکو“ کو چاروں صوبوں میں ایک ایک لاکھ ٹن گندم کی فوری ترسیل اور فروخت کی اجازت دے دی ہے، جبکہ 6 لاکھ ٹن مزید گندم کی فراہمی کے لئے شفاف انداز میں طریقہ کار طے کرنے اور جلدازجلد قانونی تقاضے پورے کرنے کہ ہدایت کردی ہے۔ فاضل ڈویژن بنچ نے یہ عبوری حکم ”پاسکو“ کی طرف سے دائر انٹرا کورٹ اپیل باقاعدہ سماعت کے لئے منظور کرتے ہوئے جاری کیا چند روز قبل عدالت عالیہ کے سنگل بنچ نے ”سوشو لیگل اینکرز فاﺅنڈیشن“ کی درخواست پر صوبوں میں گندم کی فروخت اور فراہمی کے لئے دیا گیا پاسکو کا اشتہار کالعدم کردیاتھا ۔ یہ گندم کھلی منڈی میں فروخت ہونا تھی۔ اس فیصلے خلاف ”پاسکو“ نے یہ انٹراکورٹ اپیل دائر کی ہے پاس کے وکیل نے ڈویژن بنچ کے روبرو مو¿قف اختیار کیا کہ مذکورہ اشتہار تمام قانونی تقاضے پورے کرکے جاری کیاگیاتھا ۔ پاسکو کے پاس 2008ءاور 2009ءکی فصل کا ذخیرہ بھی موجود ہے۔ ”پاسکو“ کے پاس 10لاکھ ٹن گندم صوبوں کی کھلی مارکیٹ میں فروخت کرنے کے لئے موجود ہے۔ ذخیرہ اندوز1300روپے فی من کے حساب سے گندم فروخت کررہے ہیں جبکہ پاسکو 1050 روپے کے نرخ پر گندم فروخت کرنا چاہتا ہے۔ ڈویژن بینچ نے انٹراکورٹ اپیل باقاعدہ سماعت کے لئے منظور کرتے ہوئے سنگل بنچ کا فیصلہ معطل کردیا۔ ڈویژن بنچ نے مدعا علیہان کو نوٹس کا 28 فروری کے لئے نوٹس بھی جاری کردیئے ہیں۔

مزید : صفحہ اول