لیبیا میں عسکری ملیشیا نے پارلیمنٹ کے خاتمے کی مہلت کو بڑھا دیا

لیبیا میں عسکری ملیشیا نے پارلیمنٹ کے خاتمے کی مہلت کو بڑھا دیا

  

طرابلس (اے پی پی) لیبیا میں عسکری ملیشیا نے پارلیمنٹ کے خاتمے کی مہلت کو بڑھا دیا ہے۔ ذرائع ابلاغ کے مطابق اقوام متحدہ کے لیبیا کیلئے سفیر طارق متری نے لیبیا کے عسکریت پسندوں کے ساتھ مذاکرات کر کے اس امر پر اتفاق کیا ہے کہ سیاسی طاقتوں کو تین دن کے اندر سیاسی مسائل حل کرنے کا موقع دیا جائے۔ ان مذاکرات کے دوران پارلیمنٹ کیلئے توسیع لینے، نئی عبوری حکومت اور صدارتی انتخاب جلد کرانے پر اتفاق کیا گیا ہے۔ واضح رہے کہ لیبیا کے قصبے ذبنتان سے تعلق رکھنے والی طاقتور ملیشیا نے لیبیا کی عبوری پارلیمنٹ کو پانچ گھنٹے کی مہلت دی تھی کہ وہ اپنے آپ کو ختم کر دے بصورت دیگر قانون سازوں کو اغواءکر لیا جائے گا۔ عسکری ملیشیا نے ٹی وی کے ذریعے اپنے پیغام میں کانگریس سے کہا تھا کہ ہم انہیں انتباہ کر رہے ہیں کہ ان کی مدت ختم ہو چکی ہے اس لئے اب وہ اختیارات چھوڑ دیں۔ عسکری ملیشیا نے اخوان المسلمون اور نظریاتی گروپوں کو مسئلے کی اصل جڑ قرار دیا ہے۔

مزید :

عالمی منظر -