بینکوں کی لاہورچیمبر اوآئی سی ایمبیسڈر کانفرنس کیلئے تعاون کی یقین دھانی

بینکوں کی لاہورچیمبر اوآئی سی ایمبیسڈر کانفرنس کیلئے تعاون کی یقین دھانی

  

لاہور (کامرس رپورٹر) تمام بڑے بینک لاہور چیمبر کی دوسری او آئی سی ایمبیسڈر کانفرنس کے انعقاد کے لیے ہر ممکن تعاون کریں گے جو ماہ اپریل میں منعقد ہوگی۔ بینکوں کے صوبائی سربراہان نے گورنر پنجاب چودھری محمد سرور کو یہ یقین دہانی لاہور چیمبر میں منعقدہ اجلاس کے موقع پر کرائی۔ لاہور چیمبر کے صدر انجینئر سہیل لاشاری، نائب صدر کاشف انور، سابق صدر شاہد حسن شیخ، چیئرمین سٹینڈنگ کمیٹی برائے او آئی سی حسنین رضا مرزا، وائس چیئرمین محمود غزنوی، ایگزیکٹو کمیٹی اراکین افتخار بشیر چودھری اور مدثر مسعود چودھری نے بھی اس موقع پر خطاب کیا۔ گورنر پنجاب، جو لاہور چیمبر کی دوسری او آئی سی ایمبیسڈر کانفرنس کے سرپرست اعلیٰ بھی ہیں، نے اسلامی ممالک کے درمیان تجارت کو فروغ دینے کے لیے طویل المدت اور قلیل المدت حکمت عملی مرتب کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان اسلامی دنیا سے تجارت بڑھانے کی صلاحیت رکھتا ہے لیکن روابط اور شعور و آگہی کے فقدان کی وجہ سے اس سلسلے میں کوئی نمایاں پیش رفت نہیں ہوسکی۔ گورنر پنجاب نے کہا کہ او آئی سی ممالک دنیا کے ساتھ جو تجارت کررہے ہیں اُس کے مقابلے میں اُن کی باہمی تجارت کا حجم بہت کم ہے جسے بڑھانے کے لیے انہیں نزدیک لانا ہوگا، اس سلسلے میں لاہور چیمبر کی جانب سے او آئی سی ایمبیسڈر کانفرنس کا انعقاد بہت اہمیت کا حامل ہے۔

 آلات جراحی کی مثال دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پاکستان کی کچھ مصنوعات معیار کے حوالے سے بہت بہترین ہیں مگر ان کی برآمدات نہ ہونے کے برابر ہیں۔

 ، اس جانب توجہ دیکر عالمی تجارت میں اپنا حصہ بڑھایا جاسکتا ہے۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے لاہور چیمبر کے صدر انجینئر سہیل لاشاری نے کہا کہ او آئی سی ممالک کی آپسی تجارت کا حجم مایوس کُن ہے حالانکہ یہ باہمی تجارت کو بلندیوں تک لے جانے کی بھرپور صلاحیت اور وسائل رکھتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ او آئی سی کے اراکین ممالک کی مشترکہ آبادی دنیا کی کُل آبادی کا ایک چوتھائی ہے مگر عالمی تجارت میں ان کا حصہ دس فیصد سے بھی کم ہے۔ لاہور چیمبر کی دوسری او آئی سی ایمبیسڈرز کانفرنس کے انعقاد کا مقصد باہمی تجارت کی راہ میں حائل رکاوٹوں کا جائزہ لینا اور انہیں دور کرنے کے لیے اقدامات تجویز کرنا ہے۔ لاہور چیمبر کے صدر نے کہا کہ لاہور چیمبر کی دوسری او آئی سی انویسٹمنٹ کانفرنس کا مقصد باہمی تجارت کے فروغ کی راہ میں حائل رکاوٹیں دور کرنا ہے۔ انجینئر سہیل لاشاری نے کہا کہ او آئی سی کے اراکین ممالک باہمی تجارت کو فروغ دیکر غربت میں خاتمے، معاشی نشوونما اور سرمایہ کاری کے اہداف حاصل کرسکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بدقسمتی سے اکثر مسلم ممالک آپس کے بجائے دیگر ممالک کے ساتھ تجارت کو ترجیح دیتے ہیں، انہیں اپنا یہ رویہ تبدیل کرنا چاہیے۔ اجلاس میں مسلم کمرشل بینک، البراکہ بینک، حبیب بینک، بینک آف پنجاب، سلک بینک، فیصل بینک، ڈوشے بینک، بینک الحبیب، میزان بینک، بینک الفلاح، عسکری بینک، زرعی ترقیاتی بینک، فرسٹ وومن بینک اور عبداللہ انٹرپرائزز کے صوبائی سربراہان موجود تھے۔

مزید :

کامرس -