سی آئی اے پولیس کے سربراہان کا رکردگی میں کوئی اہم تبدیلی نہ لاسکے

سی آئی اے پولیس کے سربراہان کا رکردگی میں کوئی اہم تبدیلی نہ لاسکے

  

لاہور (کرائم سیل) سی آئی اے پولیس کے سربراہ کے طور پر تعینات ہونے والے ایس پی عہدہ کے پولیس افسران کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ ان کا ماہر پولیس افسران میں شمارہوتاہے اور اور تفتیشی امور میں مکمل مہارت رکھتے ہیں مگر یہ پولیس افسران بطور ایس پی سی آئی اے کئی کئی سال تک تعینات تو رہے لیکن سی آئی اے کی کارکردگی میں کوئی اہم تبدیلی نہ لاسکے، جس کے باعث سی آئی اے پولیس کا شعبہ ڈاکوﺅں، بھتہ خوروں اور دہشت گردوں سمیت دیگر سنگین نوعیت کے کیسز میں ملوث ملزمان کیلئے خوف کی علامت بننے کی بجائے ایک عام شہری کیلئے وبال جان کی شکل اختیار کرکے رہ گیا ہے ۔ سی آئی اے کے تفتیشی سنٹروں میں اہم کیسز میں ملوث ملزمان سے تفتیش کی بجائے فراڈ، لین دین اور جیب تراشی جیسے عام کیسز کی تفتیش اور انکوائریوں نے زور پکڑ رکھا ہے۔ سی آئی اے پولیس میں سب سے زیادہ عرصہ چودھری مسعود عزیز نے بطور ایس پی گزارا، جبکہ ایس پی آفتاب اعجاز شاہ، رانا منور احمد، طاہر عالم خان سمیت کیپٹن (ر) لیاقت علی بطور ایس پی تعینات رہ چکے ہیں، موجودہ ایس پی عمر ورک اس سے قبل بھی ایس پی سی آئی اے کے طور پر تعینات رہ چکے ہیں۔ ان افسران نے بطور ایس پی سی آئی اے تعیناتی کے بعد اگلے عہدوں پر ترقی تو حاصل کی لیکن سی آئی اے کی کارکردگی کی بہتری میں کوئی اہم کردار ادا نہ کرسکے۔

مزید :

علاقائی -