سابق اہلیہ کی برہنہ تصاویر بناکر بلیک میل کرنے والاملزم اے ایس آئی گرفتار

سابق اہلیہ کی برہنہ تصاویر بناکر بلیک میل کرنے والاملزم اے ایس آئی گرفتار

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہورہائیکورٹ نے سابق اہلیہ کی برہنہ تصاویر بناکر بلیک میل کرنے والے اے ایس آئی کے خلاف کارروائی کی رپورٹ طلب کر لی۔جس کے بعد پولیس نے ملزم اے ایس آئی کو ہائی کورٹ میں ہی گرفتار کر لیا۔لاہورہائیکورٹ کے جسٹس مظاہر علی اکبرنقوی نے کیس کی سماعت کی۔درخواست گزار خاتون نسیم اختر نے موقف اختیارکیاکہ اس کا سابق شوہر مقصود پنجاب پولیس میں اے ایس آئی ہے اورفیصل آباد میں فرائض سر انجام دے رہاہے۔انہوں نے کہا کہ اسکے سابق شوہر نے اسکی برہنہ تصاویر بنا رکھی ہیں جس کے ذریعے وہ اسے بلیک میل کرنے کے ساتھ ساتھ19سالہ بیٹی بھی چھین کر لے گیا۔عدالتی سماعت کے موقع پر اے ایس آئی مقصود نے اپنی سابق اہلیہ کی طرف سے عائد الزامات کومسترد کردیا۔ عدالت نے اے ایس آئی پر سخت برہمی کااظہار کرتے ہوئے کہا کہ پولیس کا اپنے گھر والوں کے ساتھ یہ رویہ ہے تو عام شہریوں کے ساتھ کیا سلوک ہوتا ہوگا۔پولیس کو ایسی کالی بھیڑوں کو نکالنا ہوگا۔سی پی او فیصل آباد نے عدالت کو اے ایس آئی کیخلاف کاروائی کی یقین دہانی کرواتے ہوئے مقصود کو کمرہ عدالت میں ہی حراست میں لے لیا جس کے بعد کیس کی سماعت 21فروری تک ملتوی کردی گئی ہے۔

مزید :

صفحہ آخر -