سیاحت کے فروغ سے دہشت گردی میں بھی خاتمہ ہوسکتا ہے

سیاحت کے فروغ سے دہشت گردی میں بھی خاتمہ ہوسکتا ہے

  

لاہور(پ ر) سیاحت کا فروغ معاشی ترقی کے ساتھ ساتھ دہشت گردی کے خاتمے میں اہم کردار ادا کر سکتا ہے۔سیاحت کی صنعت کے فروغ سے نہ صرف ملک میں معشیت میں بہتری أئے گی بلکہ پاکستان کا وقار بھی عالمی برادری میں بلند ہو گا اور امن و امان کی فضا قائم ہوگی۔ان خیالات کا اظہارا یف پی سی سی آئی ریجنل چےئرمین منظور الحق ملک نے چوہدری عبدالغفورخان مینجنگ ڈائریکٹر پاکستان ٹورزم ڈویلپمنٹ کارپوریشن کے فیڈریشن آف پاکستان چیمبر زآف کامرس اینڈ انڈسٹری (ایف پی سی سی آئی ) کے دورا کے موقع پر کیا۔ منظور الحق ملک نائب صدر اینڈ ریجنل چےئرمین ا یف پی سی سی آئی نے کہا کہ حکومت پاکستان کو سیاحت کے شعبے کی ترقی کے لئے مناسب اقدامات کرنے چاہیں۔پاکستان قدرتی وسائل سے مالامال ہے۔سیاحت ایک غیر معمولی صنعت ہے جو کہ ملکی زرمبادلہ میں اضافے،غربت میں کمی،روزگار کے مواقع پیدا کرنے،اندرون اور بیرون ملک کے لوگوں میں باہمی ہم أہنگی اور رابطے بڑھانے میں بہترین کردار اداکر سکتی ہے۔چوہدری عبدالغفورخان مینجنگ ڈائریکٹر پاکستان ٹورزم اینڈ ڈویلپمنٹ کارپوریشن( پی ٹی ڈی سی )نے کہاکہ وہ پا کستان ٹورزم ڈویلپمنٹ کارپوریشن کو فعال ادارہ بنانے کے لئے ہر ممکن کوشاں ہیں ۔ جس کے لئے پی ٹی ڈی سی مختلف بین الاقوامی تنظموں،اےئرلائنر اور تعلیمی اداروں کے ساتھ مفاہمت ناموں پر دستخط کر رہی ہیں۔ پی ٹی ڈی سی مختلف سیاحتی مقامات کی تعمیر نو کررہی ہے، اثارقدیمہ اور ثقافتی مقامات پر خصوصی توجہ دی جارہی ہے۔ سیاحت میں نجی شعبے کے لئے بہت سے کاروباری مواقع موجودہیں، انہوں نے کہا پاکستان میں ہندووں اور سیکھوں کے بہت سے اہم مذہبی مقامات ہیں اور مذہبی سیاحت کا فروغ ان کی اولین ترجیحات میں ہے۔ان کا کہنا تھا مذہبی سیاحت ملکی سلامتی اور دہشت گردی کے خاتمے میں موئثر کردار ادا کر سکتی ہے۔منظور الحق ملک نائب صدر اینڈ ریجنل چےئرمین ا یف پی سی سی آئی اور چوہدری عبدالغفورخان مینجنگ ڈائریکٹر پاکستان ٹورزم ڈویلپمنٹ کارپوریشن ( پی ٹی ڈی سی )نے 2017 کو سیاحت کا سال قرار دیتے ہوئے کہا سیاحت ہی وہ صنعت ہے جو معمولی سرمایہ کاری سے بہترین زرمبادلہ ملک میں لا سکتی ہے۔

مزید :

کامرس -