جیل میں نظربندتحریک حریت کے کارکن کی بگڑتی ہوئی صحت پر سید علی گیلانی کا اظہار تشویش

جیل میں نظربندتحریک حریت کے کارکن کی بگڑتی ہوئی صحت پر سید علی گیلانی کا ...

  

سرینگر(آن لائن)مقبوضہ کشمیر میں کل جماعتی حریت کانفرنس کے چےئرمین سید علی گیلانی نے کوٹ بھلوال جیل میں نظربند تحریک حریت کے کارکن عبدالرحمان تانترے کی بگڑتی ہوئی صحت پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے ان کی فوری رہائی کا مطالبہ کیا ہے۔ سید علی گیلانی نے سرینگر سے جاری ایک بیان میں کہا کہ موصوف کی حالت انتہائی تشویشناک ہے اور اگر انہیں جیل میں کوئی گزند پہنچی تو اس کے سنگین نتائج برآمد ہوں گے جس کے لیے کٹھ پتلی انتظامیہ ذمہ دار ہوگی۔ انہوں نے جموں کی مختلف جیلوں میں نظربند حریت پسندوں میر حفیظ اللہ، محمد یوسف فلاحی، رئیس احمد میر، ماسٹر علی محمد ، عبدالاحد پرہ، محمد امین گنائی، مشتاق احمد ہرہ، محمد امین رینا، بشیر احمد صوفی، بشیر احمد کشمیری، بشیر احمد بویا، غلام محمد لون، شکیل احمد یتو، شاکر احمد میر، شوکت احمد ڈار، عبدالخالق ریگو اور دیگرکی مسلسل نظربندی کو غیر آئینی اور غیر قانونی قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ ان جیلوں میں سیاسی نظربندوں کو انتقام کا نشانہ بنایا جارہا ہے اور انہیں معیاری غذا اور بیمار ی کی صورت میں مناسب طبی امداد فراہم نہیں کی جارہی ہے۔

انہوں نے کہاکہ سیاسی قیدیوں اور اخلاقی قیدیوں میں کوئی تمیز نہیں رکھا جارہا ہے اور ان کے ساتھ ایک جیسا سلوک کیا جارہاہے۔ سید علی گیلانی نے کشمیری نظربندوں پر عائد کالے قانون پبلک سیفٹی ایکٹ کے خلاف دائر درخواستوں پر عدالتِ عالیہ میں مناسب کارروائی نہ ہونے اور جان بوجھ کر لیت و لعل سے کام لینے پر سخت تشویش کا اظہار کیا ۔ انہوں نے کہا کہ قابض انتظامیہ شہریوں کو اپنے سیاسی مقاصد کے لیے نشانہ بنارہی ہے اور انہیں احتیاطی نظربندی کے نام پر جیلوں میں رکھا جارہا ہے جبکہ عدلیہ اس کا ازالہ کرنے کے بجائے انتظامیہ کا ساتھ دے رہی ہے اور سیاسی انتقام کے اس عمل میں ایک ہتھیارکے طور پر کام کررہی ہے۔ انہوں نے افسوس اور حیرت کا اظہار کیا کہ معروف عالمی ادارے اور انسانی حقوق کی بین الاقوامی تنظیمیں اس لاقانونیت کا کوئی نوٹس نہیں لے رہی ہیں اور انہوں نے مجرمانہ خاموشی اختیار کررکھی ہے ۔حریت چےئرمین نے محمد یوسف شاہ گنڈ چوگل ہندواڑہ اور عبدالکبیر ڈار ڈانگرپورہ سوپور کی رحلت پر اپنے گہرے رنج وغم کا اظہار کرتے ہوئے غمزدہ خاندانوں سے اظہار تعزیت کیا اور مرحومین کی مغفرت کے لیے دعا کی۔

مزید :

عالمی منظر -