حکمران ہر محاذ پر عوام کو ریلیف فراہم کرنے میں ناکام ہوچکے ، میاں مقصود

حکمران ہر محاذ پر عوام کو ریلیف فراہم کرنے میں ناکام ہوچکے ، میاں مقصود

  

لاہور ( وقائع نگار)امیر جماعت اسلامی پنجاب میاں مقصوداحمد نے بجلی کی تقسیم کار کمپنیوں کو دی جانے والی سالانہ 200ارب روپے کی سبسڈی صارفین سے پوری کرنے کی اطلاعات پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہاہے کہ حکمران ہر محاذ پر عوام کو ریلیف فراہم کرنے میں بری طرح ناکام ہوچکے ہیں۔ایک طرف20کروڑ عوام کے جان ومال کو تحفظ حاصل نہیں تو دوسری جانب رہی سہی کسر برسراقتدار لوگوں کی ڈنگ ٹپاؤ پالیسیوں نے پوری کردی ہے۔سبسڈی دینے کے نام پر دوسرے حیلے حربوں سے عوام ہی کی خون پسینے کی کمائی کو دونوں ہاتھوں سے لوٹنے کاسلسلہ جاری ہے جس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے۔انہوں نے کہاکہ وزارت پانی وبجلی کے حکام کے مطابق جون2016تک گردشی قرضوں کی حد330ارب روپے ہے جس میں سے277ارب روپے حکومتی آئل مارکیٹنگ کمپنی پی ایس او کے ہیں جبکہ موجودہ حکومت نے2013میں آئی پی پیزکو گردشی قرضوں کی مد میں480ارب روپے کی ادائیگی کی تھی۔موجودہ آئی پی پیز کو گردشی قرضوں کو ایک خاص حد تک رکھنے اور بجلی کی تقسیم کارکمپنیوں کو مالی ریلیف دینے کے لیے کمرشل بینکوں سے قرض لیا جائے گا۔یوں محسوس ہو تا ہے کہ حکمرانو ں کو عوامی مشکلات سے کوئی غرض نہیں۔مفادپرست اشرافیہ نے 20کروڑ عوام کو یرغمال بنایاہواہے۔میاں مقصود احمد نے اس حوالے سے مزید کہاکہ حکمرانوں نے عوامی مسائل میں اضافے کے سواکچھ نہیں کیا۔ادارے تباہ وبرباد ہوچکے ہیں۔غریب عوام کو دی جانے والی سبسڈی کے نام پر کرپٹ عناصر اپنی جیبیں بھرنے میں مصروف ہیں۔حکمرانوں نے قرضے حاصل کرنے میں سبقت حاصل تو کر لی مگر عوام کو ثمرات نہیں مل سکے۔آئے روزمیگا کرپشن کے اسکینڈلز منظر عام پر آرہے ہیں۔انہوں نے کہاکہ ملک وقوم کی ترقی کے لیے ضروری ہے کہ عوام الناس کو زیادہ سے زیادہ ریلیف فراہم کیا جائے اور کرپٹ عناصر سے پائی پائی وصول کی جائے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -