شاد باغ،ٹرک کی زد میں آ کر جاں بحق ہونیوالا 8 سالہ رزاق سپردخاک

شاد باغ،ٹرک کی زد میں آ کر جاں بحق ہونیوالا 8 سالہ رزاق سپردخاک

  

لاہور( خبرنگار) شاد باغ کے علاقہ میں تیز رفتار ٹرک کی زد میں آ کر جاں بحق ہونے والا 8 سالہ رزاق خاں تیسری جماعت کا طالب علمتھا اور مدرسہ سے پڑھ کر اپنے کزن کے ساتھ سائیکل پر سوار ہو کر واپس آ رہا تھا کہ تیز رفتار ٹرک ڈرائیور نے انہیں کچل دیا۔ جس میں 8 سالہ رزاق خان شدید زخمی ہو گیا۔ جبکہ اس کا کزن 10 سالہ اسلام خان ٹرک کے ساتھ ٹکرانے پر دور جا گرا اور معمولی زخمی ہوا۔ شدیدزخمی ہونے پر 8 سالہ رزاق خان کو میو ہسپتال لے جایا جا رہا تھا کہ راستے میں ہی زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے جاں بحق ہو گیا۔ متوفی کے والد شاہ گل خاں نے ’’پاکستان‘‘ کو بتایا کہ اس کے چار بچے ہیں ایک کم سن رزاق خان کو ٹرک ڈرائیور نے کچل کر ہلاک کر دیا ہے۔ شاہ گل خاں نے کہا کہ یہ قدرت کا کھیل ہے تاہم پولیس کوچاہئے کہ ٹرک ڈرائیور کو کم سے کم گرفتار کر لیتی۔ متوفی 8 سالہ رزاق خاں کے تایا وحید خاں، عزیز خان، عبدالرزاق اور احسن خان نے بتایا کہ واقعہ پر احتجاج بھی کیا۔ اس کے باوجود پولیس ٹس سے مس نہ ہے اور 36 گھنٹے گزر جانے کے باوجود پولیس نے تاحال ڈرائیور کو گرفتار نہیں کیا ہے۔اس حوالے سے انچارج انوسٹی گیشن شاد باغ انسپکٹر حاجی رحمت علی نے بتایا کہ ٹرک ڈرائیور موقع سے فرار ہو گیا تھا جس کا نام رشید معلوم ہواہے اور اسے اگلے ایک دو دن میں گرفتار کر لیا جائے گا۔

مزید :

علاقائی -