باغبانپورہ، 7 سالہ بچی چھت سے گر کر ہلاک،بیٹی کو قتل کیا گیا،والدہ

باغبانپورہ، 7 سالہ بچی چھت سے گر کر ہلاک،بیٹی کو قتل کیا گیا،والدہ

  

لاہور ( خبرنگار )باغبانپورہ کے علاقہ میں 7 سالہ بچی پراسرار طورپر چھت سے گر کر ہلاک ہو گئی ،پولیس نے والدہ کی درخواست پر نند اورنندوئی کے خلاف مقدمہ درج کرکے لاش پوسٹ مارٹم کیلئے مردہ خانے جمع کرادی ۔بتایا گیا ہے کہ باغبانپورہ کے علاقہ اسماعیل پارک مجید کا چالو بھٹہ کے قریب رہائشی محمد علی کی 7 سالہ بیٹی عائشہ پر اسرار طور پر چھت سے گر کر ہلاک ہو گی جس پر متوفیہ کی ماں فوزیہ نورین نے پولیس کو درخواست دیتے ہوئے موقف اختیار کیا کہ اس کی بیٹی کو اس کی نند کے شوہر اور نند نے مل کر چھت سے گرا کر قتل کیا ہے ،فوزیہ نورین کے مطابق اس کا شوہر محمد علی گذشتہ ایک سال سے منشیات کیس میں جیل ہے اور اس کی ساس اورنند کے رویہ کے باعث وہ اپنے شوہر کی غیر موجود گی میں اپنے میکے رہائش پذیر ہے جبکہ اس کی بچی 7 سالہ عائشہ اپنی دادی سے ملنے کیلئے آئی ہوئی تھی جہاں بچی کی پھوپھو اور پھوپھا نے اس کوقتل کردیا ،تاہم پولیس نے لاش قبضہ میں لے کر پوسٹ مارٹم کیلئے مردہ خانے جمع کرادی اور تفتیش شروع کردی ،ذرائع کے مطابق مدعیہ مقدمہ فوزیہ نورین کے 7 بچے ہیں جن میں 6 جاں بحق ہو چکے ہیں گذشتہ روز جاں بحق ہونے والی بچی سے قبل بھی 22 روز پہلے ایک بیٹی پراسرار طور پر ہلاک ہو ئی تھی تاہم پولیس عائشہ کی ہلاکت کی وجوہات کی تلاش کر رہی ہے ۔

مزید :

علاقائی -