حافظ سعید معاشرے کیلئے خطرہ بن سکتے ہیں : خواجہ آصف، اصل خطرہ حکومتی صفوں کے لوگ ہیں : ترجمان جماعتہ الدعوۃ

حافظ سعید معاشرے کیلئے خطرہ بن سکتے ہیں : خواجہ آصف، اصل خطرہ حکومتی صفوں ...

  

 لندن(مانیٹرنگ ڈیسک ) جرمنی کے شہر میونخ میں جاری سیکورٹی کانفرنس میں وزیر دفاع خواجہ محمد آصف نے کہا کہ جماعت الدعوۃکے امیر حافظ محمد سعید اور دیگر افراد معاشرے کے لیے خطرے کا باعث بن سکتے ہیں۔حافظ سعید کی نظر بندی کے بارے میں سوال کے جواب میں خواجہ آصف نے کہا کہ انھیں فورتھ شیڈول کے تحت حراست میں لیاگیا ہے۔ انھوں نے مزید کہا کہ یہ قانون ان لوگوں پر استعمال کیا جاتا ہے جو سماج دشمن عناصر ہوں اور معاشرے کے لیے خطرے کا باعث بن سکتے ہوں۔ انھوں نے کہا کہ پاکستان نے گزشتہ چند ماہ میں ان عناصر کے خلاف کاروائیاں کی ہیں جو دہشت گردوں کی مدد کرنے میں اہم کردار ادا کرتے ہیں۔میونخ کانفرنس میں بات کرتے ہوئے خواجہ آصف نے کہا کہ حکومت اب ان تمام عناصر اور جماعتوں کے خلاف سخت ایکشن لے رہی ہے جو کہ براہ راست دہشت گردی میں ملوث نہیں ہیں لیکن دہشت گردوں کو مختلف طریقوں سے مدد فراہم کر رہی ہیں۔خواجہ آصف نے مزید کہا کہ ماضی میں بھی لشکر طیبہ اور جماعت الدعو ۃپر پابندی لگائی جا چکی ہے اور یہ جماعتیں پاکستان اور پاکستان سے باہر بالواسطہ دہشت گردی میں ملوث رہی ہیں۔ لیکن ہماری پوری کوشش ہے کہ دہشت گردی کو ہر جگہ سے ختم کیا جائے، چاہے وہ پاکستان ہو، افغانستان ہو، اور اس لیے ایسے اقدامات لینے ضروری تھے اور ہم آئندہ بھی لیتے رہیں گے۔انتہا پسندی اور دہشت گردی کے بارے میں ہونے والے سیشن میں خواجہ آصف نے سختی سے اسلامک ٹیررازم کے لفظ کی مذمت کی اور کہا کہ دہشت گردی کسی ایک مذہب سے منسلک نہیں ہے۔ دہشت گرد مسلم، عیسائی، ہندو یا بدھ مت کا پیرو کار نہیں ہوتا وہ صرف دہشت گرد ہوتا ہے ۔خواجہ آصف نے اعتراف کیا کہ ماضی میں ہم سے غلطیاں ہوئی ہیں لیکن اب ہم دہشت گردی کے خلاف پر عزم ہیں اور ہماری فوج پچھلے کئی سالوں سے دہشت گردی کے خلاف بہت اعلیٰ کار کردگی دکھا رہی ہے۔ میں عالمی برادری کو یقین دلاتا ہوں کہ ہم مستقبل میں بھی ایسا ہی کرتے رہیں گے۔

خواجہ آصف

لاہور(سٹی رپورٹر) جماعۃ الدعوۃ پاکستان کے ترجمان یحییٰ مجاہد نے وزیر دفاع خواجہ آصف کی جانب سے جرمنی کے شہر میونخ میں دیے گئے اس بیان کہ ’’حافظ محمد سعید معاشرے کیلئے خطرے کا باعث بن سکتے ہیں اسلئے انہیں نظربند کیا گیا ہے‘‘ پر شدید ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ معاشرے کیلئے خطرہ حافظ محمد سعید نہیں بلکہ حکومتی صفوں میں موجود وہ لوگ ہیں جو اس ملک میں انڈیا کے ایجنڈے کو پروان چڑھا رہے ہیں۔اپنے بیان میں انہوں نے کہاکہ خواجہ آصف جیسے حکومتی عہدیداران بھارتی خوشنودی کیلئے ملکی سلامتی کو نقصان پہنچا رہے ہیں۔انڈیا کی ریاستی دہشت گردی ساری دنیا کے سامنے ہے۔ بھارتی خفیہ ایجنسی را پاکستان میں دھماکے اور دہشت گردی کے ذریعہ نہتے پاکستانیوں کا خون بہا رہی ہے۔ کلبھوشن جیسے ایجنٹ بلوچستان میں علیحدگی کی تحریکیں پروان چڑھا کر سی پیک منصوبہ کو نقصان پہنچانے کی سازشیں کر رہے ہیں۔ اسی طرح کشمیر میں بھارتی ظلم و بربریت عروج پر ہے اور مظلوم کشمیریوں کی نسل کشی کی جارہی ہے لیکن موصوف وزیر دفاع کی زبان سے بھارتی دہشت گردی کیخلاف اور کشمیریوں کے حق میں ایک لفظ تک نہیں نکلا لیکن بھارت و امریکہ کو خوش کرنے کیلئے حافظ محمد سعید جیسے محب وطن لیڈروں کے خلاف زہر اگلاجارہا ہے۔ یحییٰ مجاہد نے کہاکہ خواجہ آصف کو چاہیے تھا کہ وہ جرمنی میں کشمیریوں پر ڈھائے جانے والے غاصب بھارت کے ظلم و ستم کے خلاف آواز بلند کرتے تاکہ دنیا میں مسئلہ کشمیر اجاگر اور انڈیا کی ریاستی دہشت گردی بے نقاب ہوتی تاہم وہ ایسا تو نہ کر سکے البتہ بھارت سے دوستی مضبوط کرنے کیلئے محب وطن لیڈروں کیخلاف الزام تراشیاں کی جارہی ہیں جس کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے۔

یحییٰ مجاہد

مزید :

صفحہ اول -