5سو درہم دے کر اپنے مرحوم پیاروں سے بات چیت کریں

5سو درہم دے کر اپنے مرحوم پیاروں سے بات چیت کریں

  

دبئی (مانیٹرنگ ڈیسک )متحدہ عرب امارات میں روحانی شخصیت کا دعویٰ کرنے والے افراد نے لوگوں کو ان کے مرحوم پیاروں سے بات کرنے کا غیر قانونی کام کرنا شروع کردیا ۔یہ روحانی شخصیات اپنے کسٹمرز سے ایک گھنٹے کے 5سو درہم فیس لے کر لوگو ں کو ان کے مرحوم پیاروں سے بات کراتے ہیں ۔غیر ملکی خبررساں ادارے ’’خلیج ٹائمز ‘‘کی رپورٹ کے مطابق متحدہ امارات میں اپنے آپ کو روحانی شخصیت ظاہر کرنے والے افراد نے ’’ہیلنگ سنٹر‘‘کھول رکھے ہیں جہاں وہ لوگوں کی بات ان کے مرحوم پیاروں سے کرانے کا دعویٰ کرتے ہیں ۔یہ ’’ہیلنگ سنٹر‘‘جمیرہ لیک ٹاور ،برشا ہائیٹ اور جمیرہ میں واقعہ ہیں جبکہ انفرادی طور پر بھی اس طرح کی روحانی شخصیات کام کر رہی ہیں ۔خلیج ٹائمز کے نمائندے نے تحقیقات کے بعد بتا یا کہ ان روحانی سنٹرز کے اشتہارات صرف ’’ہیلنگ سنٹر‘‘ کے نام سے آتے ہیں ،جب کوئی شخص اپنے مرحوم رشتے دار کی تصویر لے کر جاتا ہے تو نام نہاد روحانی شخصیات اس مرحوم کی روح کو بلاتے ہیں اور اس سے باتیں بھی کرتے ہیں ۔یہ روحانی شخصیات لوگوں کو یہ بھی بتاتے ہیں کہ ان کے پیارے اب کس حالت میں ہیں ۔روح بلانے کے حوالے سے جب ایک ہیلنگ سنٹر کے سٹاف ممبر سے پوچھا گیا تو اس نے بتا یا کہ اس کام کی وجہ سے ہماری ڈیمانڈ میں بہت اضافہ ہوا ہے اور اس کام کے لیے لوگوں کو دو سے تین ہفتے پہلے ٹائم لینا پڑتا ہے ۔جمیرہ میں کام کرنے والی ایک خاتون روحانی شخصیت نے دعویٰ کیا کہ وہ روح کو دیکھ سکتی ہے اور ان سے باتیں کرتی ہے اور پھر وہ اپنے کسٹمر ز کو پیغام بھی پہنچاتی ہے ۔اس نے بتا یا کہ جو لوگ اپنے پیاروں سے بچھڑ کر غم زدہ ہوتے ہیں ،ہم ان کی مدد کرتے ہیں تاکہ ان کے غم کو کچھ کم کیا جا سکے ۔ایک روحانی شخصیت نے بتا یا کہ کسی مرحوم کی روح ایک بار کے بعد واپس آنا منفی انرجی کی نشانی ہوتی ہے اور اس روح کو پھر سے واپس بھیجنے کے لیے 5سو درہم مزید فیس لی جاتی ہے ۔

مزید :

علاقائی -