الپوری ،انتظامیہ کی غفلت سے طالب علم جان سے ہاتھ دھو بیٹھا

الپوری ،انتظامیہ کی غفلت سے طالب علم جان سے ہاتھ دھو بیٹھا

  

الپوری (ڈسٹرکٹ رپورٹر) شانگلہ حکو مت کی عدم توجہ۔ ضلعی حکومت ،ضلعی انتظامیہ اور محکمہ ورکس کی غفلت سے ایک معصوم طالب العلم جان سے ہاتھ دھو بیٹھا، تین یونین کونسلوں کا ملا نے والا لکڑی کا پل سے گرنے والا اٹھویں جماعت کے طالب العلم صا دق خان ایک ہفتے بعد پشاور کے نجی ہسپتال میں دم توڑ گیا،اہل علاقہ کا شدید احتجاج،ایک سال پہلے گزشتہ سیلاب سے ٹوٹ جانے والا پل کی تا حال عدم تعمیر کی وجہ سے علاقے کے مکینوں خصو صاً طلباء اور مریضوں کو شدید مشکلات کا سا منا کرنا پڑ رہا ہے ،گزشتہ ہفتے اٹھویں جماعت کے طالب العلم صا دق خان پر پل کا ایک تختہ ٹوٹ جانے کی وجہ سے پل سے نیچے جا گرا تھا اور شدید زخمی ہوا تھا جس کو علاج کے لئے پشاور کے نجی ہسپتال میں منتقل کیا گیا تھا جہاں وہ ایک ہفتے تک زندگی اور موت کی کشمکش میں رہنے کے بعد جان کی بازی ہار گیا،تین یونین کونسلوں کے ہزاروں لوگوں کے آمد ورفت کے واحد یہ پل پرسے اس سے پہلے بھی کئی حادثات رونما ہو چکے ہیں ،اہل علاقہ کا شدید غم و غصہ ،کہنا تھا کہ کہ سیلاب کے بعد مسلسل ضلعی حکومتوں ۔انتظا میہ کو پل کی تعمیر کیلئے تحریری طور پر اگاہ کرنے کے باوجو د پل پر تعمیری کام شروع نہ ہو سکا، اٹھویں جماعت کے طالب العلم صا دق خان کی نماز جنازہ آبائی گاؤں سسوبے رانیال میں ادا کردی گئی جس میں ہزاروں افراد نے شرکت کی ۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -