اورنگی ٹاؤن میں احتجاج پر تشدد قابل مذمت ہے، حق پرست ارکان اسمبلی

اورنگی ٹاؤن میں احتجاج پر تشدد قابل مذمت ہے، حق پرست ارکان اسمبلی

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر) حق پرست اراکین اسمبلی محبوب عالم اور سیف الدین خالد نے اورنگی ٹاؤن اسلام چوک پر شہریوں کی جانب سے علاقے میں بڑھتی ہوئی ڈکیتی کی وارداتوں کے خلاف کئے جانے والے احتجاج پر پولیس کی جانب سے لاٹھی جارچ، شیلنگ اور بلاجواز گرفتاریوں کی سخت الفاظ میں مذمت کی ہے۔ اپنے بیان میں انہوں نے کہا کہ احتجاج کرنا ہر شہری کا آئینی، قانونی و جمہوری حق ہے۔ انہوں نے کہا کہ پولیس کی جانب سے اورنگی ٹاؤن میں گھر گھر تلاشی کے نام پر چادر اور چار دیواری کے تقدس کو پامال کیا جارہا ہے جوکہ شدید افسوسناک عمل ہے۔ انہوں نے کہا کہ پولیس احتجاج کرنے والوں کے خلاف جس تیزی سے ایکشن لے رہی ہے اگر اسی تیزی سے ڈاکوؤں کے خلاف ایکشن کرتی تو عوام کو سڑکوں پر نکلنا ہی نہیں پڑتا۔ انہوں نے کہا کہ احتجاج کے بعد پولیس کی جانب سے اورنگی ٹاؤن کے شہریوں کی گھروں سے بلاجواز گرفتاریاں پولیس گردی کی بدترین مثال ہے۔ انہوں نے کہا کہ علاقے میں تالا توڑ کر ڈکیتی کی وارداتیں حد سے زیادہ بڑھ گئی ہیں جس کے باعث عوام میں شدید بے چینی ہے۔ انہوں نے کہا کہ شہر میں تیزی سے بڑھتی ہوئی ڈکیتی کی واردتیں سندھحکومت اور پولیس کی کھلی نااہلی ہے۔ حق پرست اراکین اسمبلی محبوب عالم و سیف الدین خالد نے اپنے مشترکہ بیان میں کہا کہ سندھ حکومت اور پولیس شہریوں کو تحفظ فراہم کرنے میں ناکام ہوچکی ہے اور اب سندھ حکومت کے ماتحت پولیس کا ادارہ پولیس گردی کی بدترین مثالیں قائم کررہا ہے۔ انہوں نے وفاقی و صوبائی حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ اورنگی ٹاؤن اسلام چوک واقعے میں ملوث ڈاکوؤں، پولیس اہلکاروں کے خلاف سخت سے سخت ایکشن لے اور شہریوں کو ہرممکن تحفظ فراہم کرے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -