پنجاب میں دہشت گردوں کو دیکھتے ہی گولی مار دینے کا فیصلہ ہو گیا

پنجاب میں دہشت گردوں کو دیکھتے ہی گولی مار دینے کا فیصلہ ہو گیا
پنجاب میں دہشت گردوں کو دیکھتے ہی گولی مار دینے کا فیصلہ ہو گیا

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )پنجاب میں دہشت گردوں کو دیکھتے ہی گولی مارنے کا فیصلہ کر لیا گیا جبکہ دہشت گردوں کے سہولت کاروں کو بھی جیک بلیک دہشت گرد سمجھا جائے گا ۔

نجی نیوز چینل دنیا نیوز کے مطابق گزشتہ روز وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف کی زیر صدارت ہونے والے اپیکس کمیٹی کے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ پنجاب میں دہشت گردوں کے خلاف آپریشن کو تیز کیا جائے گا۔اجلاس میں اتفاق کیا گیا کہ صوبے میں دہشت گردوں کے خلاف زیرو ٹالرنس پالیسی ہو گی اور جن دہشت گردوں کے قبضے سے خود کش جیکٹس اور بارودی مواد برآمد ہو ،انہیں دیکھتے ہی گولی مار دی جائے ۔

شوہرکے انتہاپسندہونے کاعلم تھا،انوارلحق کی بیوی کا انکشاف

اس موقع پر یہ فیصلہ بھی کیا گیا کہ دہشت گردوں کے سہولت کاروں کو بھی ”جیک بلیک “دہشت گرد سمجھا جائے اور ان سہولت کاروں کے پورے نیٹ ورک کو توڑا جائے گا اور ان کو رہائش فراہم کرنے سے لے کر پناہ دینے اور اطلاعات پہنچانے والوں کے خلاف بھی گھیرا تنگ کیا جائے گا ۔ دہشت گردوں کے خلاف بھر پور آپریشن کے لیے طے کیا گیا ہے کہ اگر سی ٹی ڈی اور پنجاب پولیس چاہے گی تو رینجرز کو طلب کیا جا سکے گا اور رینجرز تنہا نہیں بلکہ پہلے سے موجود سی ٹی ڈی او ر پولیس کے ساتھ مل کر آپریشن کرے گی ۔ذرائع کے مطابق اپیکس کمیٹی کے اجلاس کو بتا یا گیا کہ کالعدم تنظیم جماعت الحرار کو پنجاب سے سپورٹ لشکر جھنگوی کا نیٹ ورک فراہم کر رہا ہے اور اس کے زیادہ تر وہ کارندے جو لشکر کی قیادت مارے جانے کے بعد بھٹک رہے تھے اب اس تنظیم سے رابطے میں ہیں جس کے بعد طے پا یا کہ دہشت گردوں کو دیکھتے ہی گولی مار دی جائے ۔

مزید :

لاہور -اہم خبریں -