سیکیورٹی خدشات ،ججوں کی نقل و حرکت محدود ،حفاظتی عملہ کی تعداد دو گنا کردی گئی

سیکیورٹی خدشات ،ججوں کی نقل و حرکت محدود ،حفاظتی عملہ کی تعداد دو گنا کردی ...
سیکیورٹی خدشات ،ججوں کی نقل و حرکت محدود ،حفاظتی عملہ کی تعداد دو گنا کردی گئی

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )سکیورٹی خدشات کے پیش نظر اعلیٰ عدلیہ سمیت پنجاب بھر کی ماتحت عدالتوں کے ججوںکی سرکاری و غیرسرکاری سرگرمیاں محدود کر دی گئی ہیں جبکہ اعلیٰ عدلیہ کے تمام ججوں کی حفاظت کے لئے تعینات پولیس اہلکاروں کی تعداد بھی دو گنا کردی گئی ہے .

شوگر ملوں کی طرف سے کسانوں کو واجبات کی عدم ادائیگی پر کین کمشنر سے تفصیلی رپورٹ طلب

سکیورٹی اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کی طرف سے پنجاب میں اعلی عدلیہ کے جج صاحبان اور ضلعی عدلیہ کے جوڈیشل افسروں کو تجویز کیا گیا تھا کہ ملک میں جاری دہشت گردی کی نئی لہر کے پیش نظر ججز اور ان کے خاندان کے افراد اپنی سرگرمیاں محدود کردیں اور اگر بہت ہی ضروری سرگرمی ہو تو اسے انتہائی خفیہ رکھا جائے تاکہ ججز کی زندگیوں کو تحفظ فراہم کرنے کے لئے زیادہ سے زیادہ اقدامات اٹھائے جاسکیں، ذرائع کے مطابق سکیورٹی اداروں کی تجاویز کی روشنی میں لاہور سمیت پنجاب میں اعلی عدلیہ کے جج صاحبان اور جوڈیشل افسروں نے اپنی سرکاری و غیرسرکاری سرگرمیاں محدود کر دی ہیں اور انتہائی ضروری مصروفیت کو بھی خفیہ رکھا جا رہا ہے، اعلی عدلیہ کے ججز اور اہم مقدمات کی سماعت کرنے والے جوڈیشل افسروں کو سرگرمیاں محدود کرنے بارے آگاہ کر دیا گیاہے۔معلوم ہوا ہے کہ اعلیٰ عدلیہ کے تمام ججوں کی حفاظت کے لئے تعینات پولیس اہلکاروں کی تعداد بھی دو گنا کردی گئی ہے ۔

مزید :

لاہور -