پاکستان ریلوے نے ای ٹکٹنگ کےلئے موبائل ایپ متعارف کروا دی، مسافرسمارٹ فون کے ذریعے بھی ٹکٹ بک کرا سکیں گے

پاکستان ریلوے نے ای ٹکٹنگ کےلئے موبائل ایپ متعارف کروا دی، مسافرسمارٹ فون کے ...
پاکستان ریلوے نے ای ٹکٹنگ کےلئے موبائل ایپ متعارف کروا دی، مسافرسمارٹ فون کے ذریعے بھی ٹکٹ بک کرا سکیں گے

  

لاہور(آئی این پی) پاکستان ریلوے نے ای ٹکٹنگ کے لئے موبائل ایپ متعارف کروا دی، اب ریلوے کے مسافر اسمارٹ فون کے ذریعے بھی ٹکٹ بک کرا سکیں گے۔

افتتاحی تقریب سے گفتگو کرتے ہوئے خواجہ سعد رفیق کا کہناتھا کہ پاکستان ریلوے کی آفیشل کی ایپ گوگل سٹور پر دستیاب ہے،اوقات کار ، ٹریول، ٹکٹس، ہیلپ لائن، فریٹ اور فیڈ بیک کی آپشنز موجود ہیں۔ انہوں نے کہا کہ آئن لائن سروس سنگ میل کی حیثیت رکھتا ہے۔ 48 ٹرینیں جن کی ریزویشن ای ٹکٹنگ پر آ چکی ان کے موبائل فون پر ٹکٹ بک کروائے جا سکتے ہیں۔کسی بھی جگہ پر ٹکٹ بک کروا ئی جائے اس کے کوئی چارجز نہیں ہے، یو بی ایل اکاﺅنٹ سے بھی بکنگ ہو سکتی ہے۔انہوںنے کہا کہ جن کے پاس سمارٹ فون نہیں ہوگا ان کے لئے کال سنٹرز کا اجرا ءکیا جائے گا ۔موبائل ایپ کو نئی ٹیکسی سروس سے جوڑا جائے گا تاکہ ٹرین تک آنے میں مشکلات نہ ہوں۔

انہوں نے کہا کہ300اکانومی کلاس کی کوچز کو اے سی اسٹینڈرڈ فراہم کریں گے،یہ پہلا مرحلہ ہے پاور پلانٹ بھی مزید لگائیں گے۔انہوںنے کہا کہ جرمن سٹاک کوچز کی ٹائمنگ کم رہ گئی ہے 10سے 12سال معیار بڑھائیں گے تو سوا کروڑ روپے خرچ ہوں گے۔ انٹیرئیر ڈیزائززسے 4 ماہ میں 120کوچز کی حالت بدل دیں گے ،چھوٹی ونڈو کو بڑا کریں گے ،اندر سے باہر دیکھنے کے شیشے لگائیں گے ۔ انہوںنے کہا کہ2000پرانی وینز میں سے1300بہتر کریں گے 800کوچز میں سے 700 تیار ہیں100 بھی جلد تیار کریں گے ،39جرمن 9 چین کوچز کو بھی تبدیل کر دیں گے۔انہوںنے بتایا کہ مارچ میں 7نئے لوکو موٹیو پاکستان پہنچنے والے ہیں ۔پی اینڈ ڈی ڈیپارٹمنٹ سے مل کر ڈیزائن بنائیں گے اور بی او ٹی کے ذریعے انڈر پاسز بنائیں تاکہ سکیورٹی میں چلے جائیں۔

انہوںنے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ شالیمار ایکسپریس کے کنٹریکٹ کو بڑھانے کےلئے سفارشیں کی گئیں ہمیںان سے 66کروڑ 66لاکھ روپے ملے لیکن اب ایک ارب 80کروڑ روپے آمدنی ہوئی، ایک ارب 14کروڑ کی زیادہ آمدنی ہوئی ۔انہوںنے کہا کہ ہم نے خسارہ کم کرکے مینٹی ننس بہتر بنانی ہے اور پیسے مزدوروں پر خرچ کرنے ہیں ۔پاکستان ریلوے کو دنیا کی بہترین ریل بنانے کیلئے کوشاں ہیں ،ریلوے کے بنیادی ڈھانچے کی ترقی پر بھی سرمایہ کاری کر رہے ہیں۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ ایم ایل ون منصوبے پر کام چل رہا ہے جس کے بعد پشاور سے کراچی تک ریل 160 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے چلے گی۔ فزیبلٹی رپورٹ تیار ہے، چین کے ساتھ سی پیک پر بھی بات چیت کر رہے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ ایم ایل ون کے لئے فزیبلٹی رپورٹ تیار ہے چین کے ساتھ سی پیک پر بات چیت کر رہے ہیں ،پشاور سے کراچی تک ٹرین 160تک چلے گی کہیں کہیں 120 تک چلے گی۔انہوں نے کہا کہ گوادر کو جیکب آباد تک لے کر جانا سی پیک ہے ،ریلویز کی چند لائنیں اہم برانچ لائنیںہیں ،مارچ تک ٹینڈر دیں گے ،فنانشل ریسورس تلاش کرنا ہے اس کے لئے ایشین بینک بات چیت چل رہی ہے۔ ان کا کہناتھا کہ کوئلہ چوری نہیں ہوا پہلی بار آپریشن کیا اس میںغلطیاں سامنے آ رہی ہیں ،5 ٹرینیں روزانہ چلائیں گے ،780ہوپر ویگن چل رہی ہیں 200خود تیار کریں گے 60ٹرینیں ہر ماہ تیار کریں گے۔

مزید :

قومی -