”جمائمہ تو پگلی ہے جو ہر بات پر احتجاج شروع کردیتی ہے میں نے تو صرف ایک بار ہی۔۔۔“ دیوانے سے تنگ جمائمہ عدالت پہنچ گئیں

”جمائمہ تو پگلی ہے جو ہر بات پر احتجاج شروع کردیتی ہے میں نے تو صرف ایک بار ...
”جمائمہ تو پگلی ہے جو ہر بات پر احتجاج شروع کردیتی ہے میں نے تو صرف ایک بار ہی۔۔۔“ دیوانے سے تنگ جمائمہ عدالت پہنچ گئیں

  

لندن (ڈیلی پاکستان آن لائن) کچھ لوگ دھن کے اتنے پکے ہوتے ہیں کہ بار بار سمجھانے پر بھی اپنے ارادوں سے باز نہیں آتے اور منزل کے حصول کیلئے تگ و دو کرتے رہتے ہیں ۔ ایسا ہی ایک دھن کا پکاشخص عمران خان کی سابقہ اہلیہ جمائمہ گولڈ سمتھ کا بھی دیوانہ ہوچکا ہے جو گزشتہ 2 سال سے ان کے پیچھے ہاتھ دھو کر پڑا ہوا ہے۔

’شادی شدہ مَرد سب سے زیادہ دن کے اس وقت مجھ سے ملنے آتے ہیں‘ جسم فروش خاتون نے انٹرنیٹ پر ایسا راز بے نقاب کردیا کہ جان کر بہت ساری خواتین کو زوردار جھٹکا لگے لگا کیونکہ۔۔۔

برطانوی میڈیا کے مطابق آئرلینڈ سے تعلق رکھنے والا 60 سالہ کانر او ماہونی ، جمائمہ گولڈ سمتھ کے پیار میں مکمل طور پر نہ صرف پاگل ہو چکا ہے بلکہ ہاتھ دھو کر ان کے پیچھے پڑ گیا ہے۔ دھن کا پکا یہ شخص ٹوئٹر پر روزانہ کی بنیاد پر جمائمہ کو پانچ عدد پیار بھرے پیغامات بھیجتا ہے اور خطوط بھی باقاعدگی سے لکھتا ہے۔ ایک بار تو موصوف نے جمائمہ کے گھر ٹیکسی بھیج دی اور ڈرائیور کو ہدایت کردی کہ خاتون کو لے کر فلاں ہوٹل میں پہنچ جائے ۔ کانر کو کئی بار جمائمہ کے گھر کے باہر بھی چکر کاٹتے دیکھا گیا ہے جبکہ وہ باقاعدگی سے جمائمہ کے لیکچرز بھی اٹینڈ کرتا ہے۔

نومبر 2015 میں جمائمہ کی شکایت پر کانر کو ان سے دور رہنے کی ہدایت کی گئی تھی لیکن وہ اپنی دھن کا پکا نکلا اور تاحال ان کا پیچھا چھوڑنے پر رضا مند نہیں ہے۔

پیر کے روز جمائمہ گولڈ سمتھ کی شکایت پر کانر کو عدالت میں طلب کیا گیا جہاں اس نے خاتون کو ہراساں کرنے کا اعتراف کرلیا اور کہا کہ ” جمائمہ تو پگلی ہے جو بات بات پر احتجاج شروع کردیتی ہے“ میں نے اسے صرف ایک بار ہی تنگ کیا ہے ۔

ابرار الحق کو امریکی ویزہ کے لئے ’بلیک لسٹ‘ کردیا گیا،غلط ویزہ کیٹیگری پر کنسرٹس اور ٹیکس نہ دینے کا کا الزام

 مجھے یقین ہے چونکہ میں آئرلینڈ سے تعلق رکھتا ہوں اس لیے مجھے یہاں برطانیہ میں انصاف فراہم نہیں کیا جائے گا ۔فریقین کے وکلا کے دلائل سننے کے بعد عدالت نے کیس کی مزید سماعت 13 مارچ تک ملتوی کردی ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -