عوام کو انصاف کی فراہمی اولین ترجیح ہے،ڈاکٹر ثناء اللہ عباسی

    عوام کو انصاف کی فراہمی اولین ترجیح ہے،ڈاکٹر ثناء اللہ عباسی

  

مردان(بیورورپورٹ) آئی جی خیبرپختون خوا ڈاکٹرثناء اللہ عباسی نے کہاہے کہ عوام کو انصاف کی فراہمی اولین ترجیح ہے ضم اضلاع میں پولیس سسٹم کی مضبوطی سے پورے ملک خصوصاً پورے صوبے میں امن کی حالت زار بہتر ہوگی،ان اضلاع میں اب تک ایک ہزار ایف آئی آر درج ہوچکے ہیں وہ اپنے دورے مردان کے موقع پرپولیس لائن میں عمائدین علاقہ سے خطاب اور بعدازاں میڈیا سے گفتگو کررہے تھے ڈی آئی جی شیر اکبر خان،ایس پی اپریشن مشتاق احمد خان ڈی آرسی کے رجسٹرار احسان باچہ،مرکزی تنظیم تاجران کے صدر ظاہر شاہ اور ڈسٹرکٹ بار کے صدر آصف اقبال نے بھی خطاب کیا ڈی پی او سجادخان کے علاوہ پبلک سیفٹی کمیشن کے چیئرمین حاجی عبدالعزیزخان،چیمبر کے سینئر نائب صدر حاجی اویس خان،ڈی آرسیز کے ممبران اورعمائدین علاقہ نے بڑی تعداد میں شرکت کی آئی جی نے کہاکہ خیبرپختون خوا کی بہادر پولیس فورس بہادری سے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں بڑی قربانیاں دی ہیں مجھے اس فورس کی سربراہی پر فخر ہے انہوں نے کہاکہ پولیس ہر قسم سیاسی مداخلت سے آزاد ہے انہوں نے کہاکہ ضم اضلاع میں مستحکم بنیادوں پر پولیس نظام کو استوار کررہے ہیں جس سے امن امان کی حالت زار بہتر ہوگی انہوں نے ڈی آر سی کی کاکردگی پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ ان میں خواتین کی نمائندگی دینے سے کاکردگی مزید بہتر ہوسکتی ہے آئی جی نے کہاکہ بنیادی انسانی حقوق کا تحفظ انہتائی اہم ہے خواتین اور بچوں کے حقوق پر خصوصی توجہ دی جارہی ہے انہوں نے کہاکہ قانونی کی حکمرانی اور عدلیہ کے فیصلوں کی نفاذ کے لئے اہلکار تمام تر وسائل بروئے کار لائیں ڈاکٹر ثناء اللہ عباسی نے کہاکہ پولیس اور عوام کے مابین فاصلے مزید کم اور تعلقات بہتر بنائیں گے انہوں نے کہاکہ کے پی پولیس نے اصلاحات کے نتیجے میں عوام کو گھر کی دہلیز پر انصاف فراہم کررہے ہیں انہوں نے کہاکہ دہشت گردی کے خلاف میں لازوال قربانیوں کو پوری دنیا قدر کی نگاہ سے دیکھتی ہے قبل ازیں آئی جی نے یادگارشہداء پرپھول چڑھائے اورفاتحہ خوانی کی آئی جی نے سرحدی یتیم خانے کا بھی دورہ کیا اور زیر تعلیم بچوں سے گھل مل گئے آئی جی نے ڈی آئی آفس میں اعلیٰ سطحی اجلاس کی صدارت بھی کی جس میں ریجن کے اضلاع میں امن امان کا جائزہ لیا اجلاس ڈی آئی جی شیر اکبر خان کے علاوہ ریجن کے تمام اضلاع کے ڈی پی او ز نے شرکت کی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -