اقتدار میں آنے کے باوجود پی ٹی آئی گالی گلوچ کی سیاست سے بازنہیں آئی،شیر اعظم وزیر

  اقتدار میں آنے کے باوجود پی ٹی آئی گالی گلوچ کی سیاست سے بازنہیں آئی،شیر ...

  

  

بنوں ( بیورورپورٹ)خیبر پختونخوا اسمبلی میں پاکستان پیپلز پارٹی کے پارلیمانی لیڈر شیراعظم خان وزیر نے کہا ہے کہ گذشتہ روز خیبر پختونخوا اسمبلی میں جو شرمناک واقع پیش آیا اس نے پاکستان کی پارلیمانی تاریخ کو مسخ کردیا ہے اور اپوزیشن پر حملہ کرنے کیلئے باقاعدہ منصوبہ بندی کی گئی تھی اقتدار میں آکر بھی تحریک انصاف والے گالم گلوچ اور لڑائی مارکٹائی کی سیاست سے باز نہیں آتے پہلے اپوزیشن ممبران اور سیاسی قائدین کو دباے کیلئے جھوٹے اور بے بنیاد مقدمات بنائے گئے لیکن سیاسی مخالفین پر کچھ ثابت نہ کیا جاسکا اب اسمبلی میں ان پر حملے کئے جارہے ہیں جسکی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے اپوزیشن ممبران اس قسم کے اوچھے ہتھکنڈوں سے ڈرنے والے نہیں،حکومتی اراکین اور وزراء غیر جمہوری طریقے سے اپوزیشن ممبران کو قابو کرنے بجائے مہنگائی کو قابو کرے ان خیالات کا اظہار انہوں نے اخباری نمائندوں سے خصوصی بات چیت کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف اس وقت پاکستانی سیاست کیلئے کرونا وائرس بن چکی ہے،وزیر اعظم عمران خان یوٹرن خان بن گئے ہیں ڈیڈھ سال سے زائد کا عرصہ یوٹرن پر گزارا جو شخص حکومت میں ہوتے ہوئے اپنے اتحادیوں کو خوش نہ کرسکے وہ ملک کے21کروڑ سے زائد عوام کو کیسے خوش رکھ سکتا ہے مہنگائی کو تسلیم کرنے سے عمران خان غریب اور کم تنخواہ والے افراد کے زخموں کی مرہم پٹی نہیں کرسکتے سلیکٹڈ وزیر اعظم کو چاہیئے کہ وہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کریں،گیس،بجلی اور اشیائے خوردونوش کی قیمتوں میں کمی لائیں اور غریب عوام کو ریلیف دیں ورنہ غریب عوام اور کم تنخواہوں والے فاقہ کشی پر مجبور ہوجائیں گے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -