ہوا میں مضر ذرات جانچنے والے سرکاری آلات غیر فعال نکلے

ہوا میں مضر ذرات جانچنے والے سرکاری آلات غیر فعال نکلے

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر) ہوا میں مضر ذرات جانچنے والے سرکاری آلات غیر فعال نکلے۔ذرائع کے مطابق کراچی میں ہوا میں مضر ذرات جانچنے والے سرکاری آلات غیر فعال نکلے۔جائیکا نے13 سال قبل یعنی 2007 میں پاکستان کو 11 ملین ڈالرز کے ہوا میں مضر ذرات جانچنے والے آلات تحفے میں دیئے تھے۔کراچی میں جائیکا کی طرف سے دیئے گئے آلات میں سے 3 نصب کردیئے گئے تھے۔18ویں ترمیم کے بعد ماحولیات کا محکمہ صوبے کے پاس آگیا تو وفاق نے آلات کو آپریٹ کرنے والا اپنا تربیتی عملہ واپس بلالیا۔ذرائع کے مطابق 2010 کے بعد سے ہوا میں مضر ذرات جانچنے کا مانیٹرنگ یونٹ و دیگرآلات ناکارہ پڑے ہیں۔ترجمان ای پی آئی کے مطابق آلات میں موجود قیمتی کیمیکل خراب ہوچکے ہیں،جنھیں قابل استعمال بنانے کے لیے اقدامات کیے جارہے ہیں۔کیماڑی میں جان لیو اگیس سے ہلاکتیں سامنے آنے کے بعد اداروں کوایئر کوالٹی جانچنے کیلیے نجی تنظیموں سے رابطہ کرنا پڑا۔

مزید :

صفحہ اول -