” رکن اسمبلی اپنے پانچ بیٹوں اور بھتیجے کے ساتھ مجھے چھ سال سے جنسی زیادتی کا نشانہ بنا رہا ہے اور ۔۔“ بھارت میں خاتون نے بی جے پی کے رکن کے خلاف مقدمہ درج کروا دیا

” رکن اسمبلی اپنے پانچ بیٹوں اور بھتیجے کے ساتھ مجھے چھ سال سے جنسی زیادتی کا ...
” رکن اسمبلی اپنے پانچ بیٹوں اور بھتیجے کے ساتھ مجھے چھ سال سے جنسی زیادتی کا نشانہ بنا رہا ہے اور ۔۔“ بھارت میں خاتون نے بی جے پی کے رکن کے خلاف مقدمہ درج کروا دیا

  

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت میں رکن اسمبلی، اس کے پانچ بیٹوں اور ایک بھتیجے پر ایک ہی خاتون کو سالہا سال تک جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے کے الزام میں مقدمہ درج کر لیا گیا۔ ٹائمز آف انڈا کے مطابق رویندر ناتھ ترپاٹھی نامی ملزم نریندر مودی کی جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی کا رکن ہے اور اسی کے ٹکٹ پر ریاست اترپردیش کے شہر بھادوہی سے رکن اسمبلی منتخب ہوا تھا۔ ترپاٹھی کے خلاف ایک خاتون نے مقدمہ درج کروایا ہے کہ ترپاٹھی، اس کے 5بیٹے اور ایک بھتیجا اسے کئی سال سے زیادتی کا نشانہ بناتے آ رہے ہیں۔

خاتون نے اپنی رپورٹ میں بتایا کہ یہ ساتوں لوگ 6سال سے زائد عرصے سے اس سے زیادتی کرتے آ رہے ہیں۔ وہ بہت طاقتور لوگ ہیں جس کی وجہ سے وہ خوف کے مارے آج تک خاموش رہی۔ بھادوہی ایس پی رام بیدن سنگھ کا کہنا ہے کہ ”خاتون کی درخواست پر ساتوں ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا ہے اور ایک اے ایس پی کی قیادت میں پولیس ٹیم معاملے کی تحقیقات کر رہی ہے۔ خاتون کو پولیس سکیورٹی بھی مہیا کر دی گئی ہے۔ “

پولیس کے مطابق خاتون نے اپنی رپورٹ میں بتایا کہ ”میرے شوہر کا انتقال 2007ءمیں ہو گیا تھا اور میری کوئی اولاد نہیں تھی۔ میں 2014ءمیں ٹرین کے ذریعے ممبئی سے بھادوہی آ رہی تھی کہ ٹرین میں میری ملاقات ترپاٹھی کے بھتیجے سندیپ سے ہوئی۔ہم ایک دوسرے سے باتیں کرتے رہے اور کافی قریب آ گئے۔ اس نے اسی دن راستے میں وارانسی ریلوے سٹیشن پر ایک ہوٹل میں مجھے جنسی زیادتی کا نشانہ بناڈالا۔ اس نے مجھ سے شادی کا وعدہ کیا۔ اس کے بعد وہ بھادوہی، وارانسی اور ممبئی کے ہوٹلوں میں لیجا کر مجھے زیادتی کا نشانہ بناتا رہا۔میرا ان کے ہاں آنا جانا ہو گیا تھا اور 2017ءانتخابی مہم میں میں ان کے ساتھ رہی، اس الیکشن مہم کے دوران ترپاٹھی اور اس کے پانچ بیٹوں نے بھی مجھے زیادتی کا نشانہ بنایا۔“

مزید :

بین الاقوامی -