پنجاب فوڈ اتھارٹی غیر معیاری مشروبات تیار کرنے والے مافیا کیخلاف سرگرم

   پنجاب فوڈ اتھارٹی غیر معیاری مشروبات تیار کرنے والے مافیا کیخلاف سرگرم

  

 ملتان (سپیشل رپورٹر)ڈائریکٹر جنرل پنجاب فوڈاتھارٹی رفاقت علی نسوآنہ کی ہدایت پر فوڈ سیفٹی ٹیموں جنوبی پنجاب میں مضر صحت خوراک تیار کرنے والوں کے خلاف کارروائیاں جاری ہیں۔ فوڈ سیفٹی ٹیموں نے 319 فوڈ یونٹس کی چیکنگ کے دوران غیر معیاری خوراک کی فروخت پر 4 فوڈ یونٹس سیل جبکہ 239 شاپس (بقیہ نمبر36صفحہ6پر)

مالکان کو بہتری نوٹسز جاری کیے۔ تفصیلات کے مطابق اوکاڑہ میں ملک آئس ڈرنک اور ندیم آئس ڈرنک کو جوس کی تیاری میں مصنوعی مٹھاس، کیمیکلز، رنگ کاٹ اور کھلے رنگ کا استعمال کرنے پر سیل کر دیا گیا۔ کیمیکلز، رنگ کاٹ اور پیکنگ میٹریل پر کوئی لیبلنگ نہ پائی گئی۔ پروڈکشن ایریا میں جانوروں کی باقیات اور گندگی پائی گئی۔ کاروائی کے دوران 470 لٹر مینگو جوس تلف کر دیا گیا۔ اس کے علاوہ ساہیوال میں ہادی بیکری جبکہ پاکپتن میں علی رضا بیکری کو خوراک کی تیاری میں ٹوٹے انڈوں کا استعمال کرنے اور صفائی کے ناقص انتظامات پر سربمہر کیا گیا۔ اس کے علاوہ ملتان میں جالندھر بیکری اور جامعہ سویٹس کو خوراک کی تیاری میں ایکسپائرڈ مصالحوں کا استعمال کرنے، خرید و فروخت کا ریکارڈ نہ ہونے پر یکساں 15، 15 ہزار روپے جرمانہ عائد کیا گیا۔ مزید وہاڑی میں پری زائیڈ فوڈز کو ایکسپائرڈ اشیاء کی فروخت کرنے پر 15 ہزار جبکہ ساہیوال میں المدینہ انڈسٹریز کو سٹوریج ایریا میں چوہوں کی موجودگی پائے جانے اور لیبلنگ نہ ہونے پر 30 ہزار روپے جرمانہ عائد کیاگیا۔ مزید براں رحیم یار خان میں نیو جالندھر سویٹس اینڈ بیکری پروڈکشن یونٹ کو بدبودار فریزر ہونے جبکہ خیبر ٹی اینڈ ڈرائی فروٹ کو ملاوٹی مصالحے فروخت کرنے پر یکساں 20  ہزار روپے جرمانہ عائد کیا گیا۔ مجموعی طور پر کی گئی کارروائیوں کے دوران 557 لٹر مشروبات، 80 کلو مصالحے اور 207 ساشے گٹکا تلف کیا گیا۔

فوڈ اتھارٹی

مزید :

ملتان صفحہ آخر -