پی ایچ اے میں ایم اے اور بی اے پاس ملازمین مالی کا کام کرنے پر مجبور

پی ایچ اے میں ایم اے اور بی اے پاس ملازمین مالی کا کام کرنے پر مجبور

لاہور(اپنے خبر بگار سے )پارکس اینڈہارٹیکلچر اتھارٹی میں ایم اے اور بی اے پاس ملازمین درجہ چہارم کے عہدے پر کام کرنے پر مجبور ہیں اور اس وقت 300سے زائد مالی جو کہ بی اے اور ایم اے پاس ہیں ان کا کہنا ہے کہ انہوں نے بے روز گاری اور اوور ایج ہونے کے ڈرسے مالی کے عہدے پر ملازمت اختیار کی اور اب انہیں نوکری کرتے ہوئے 12سال گزر گئے ہیں اور ان بارہ سالوں میں اتھارٹی نے کئی بار نئی بھرتیاں کیں لیکن ہمیں نظر انداز کر دیا گیا اور نئے آدمی بھرتی کر لئے جبکہ ان کی تعلیمی قابلیت بھی ہم لوگوں سے کم تھی ان میں سے بعض ملازمین کا کہنا تھا کہ نئی بھرتی کرتے وقت پڑھے لکھے ملازمین کا کوٹا ہونا چاہے تا کہ وہ بھی اپنی تعلیمی قابلیت کا فائدہ اٹھا سکیں اس حوالے سے جب شعبہ ایڈمنسٹریشن سے بات کی گئی تو ان کا کہنا تھا کہ اس معاملے میں اتھارٹی کی واضع پالیسی ہے جب بھی نئی بھرتی ہوتی ہے تو ادارے میں پڑھے لکھے لوگ تھرو پراپر چینل اس میں شمولیت اختیار کر سکتے ہیں

مزید : میٹروپولیٹن 1