مہنگے اتوار بازار!

مہنگے اتوار بازار!

سستے اتوار بازاروں کے حوالے سے شکایات دیرینہ ہیں، سرکاری سرپرستی اور نگرانی میں ہونے کے باوجود یہاں نہ تو اشیا کا معیار بہتر ہوتا ہے اور نہ ہی نرخ کم ہوتے ہیں، اخبارات اور الیکٹرانک میڈیا نے اتوار بازاروں سے صارفین کی رائے بتائی ہے ان کے مطابق گوشت، مرغی اور انڈے اب رکھے ہی نہیں جاتے کہ کم نرخوں پر دینا ہوتے ہیں جبکہ سبزیوں، پھلوں اور دوسری اشیاء کا معیار پست ہے اسی طرح نرخ بھی عام بازار جتنے یا کسی شے کے زیادہ بھی ہیں۔ یہ اتوار بازار ہر ضلع کی ضلعی انتظامیہ کی نگرانی میں ترتیب دیئے گئے ہیں۔ دکانداروں کو یہاں کسی معاوضہ یا فیس کے بغیر جگہ ملتی ہے، اس کے باوجود یہاں دکانیں سجانے والے معیاری اشیا نہیں لاتے اور مہنگی اشیاء کے نرخ بھی زیادہ رکھتے ہیں، اس سے اچھائی کی جگہ بدنامی ملتی ہے۔ ضلعی انتظامیہ کے ذمہ دار حضرات کو ان امور کا جائزہ لے کر سدباب کرنا چاہیے کہ یہ حکومتی نیک نامی کا سوال ہے۔

مزید : اداریہ