بھارت میں سپریم کورٹ کے صرف 26جج، امریکہ میں 147سال سے تعداد نہیں بڑھائی گئی

بھارت میں سپریم کورٹ کے صرف 26جج، امریکہ میں 147سال سے تعداد نہیں بڑھائی گئی

لاہور(سعید چودھری )سینیٹ نے سپریم کورٹ کے ججز کی تعداد 17سے بڑھا کر 26کرنے کا بل منظور کرلیا ہے جسے اب قومی اسمبلی میں پیش کیا جائے گا ،دیگر ممالک میں سپریم کورٹ کے ججز کی تعداد کیا ہے ؟امریکی سپریم کورٹ کے ججوں کی تعداد 9ہے جبکہ برطانوی سپریم کورٹ میں 12اوربھارتی سپریم کورٹ میں 26جج کام کررہے ہیں ۔پاکستان میں آصف علی زرداری کے دور حکومت میں فنانس ایکٹ مجریہ 2008ء کے ذریعے سپریم کورٹ کے ججوں کی تعداد 17سے بڑھا کر 30کردی گئی تھی تاہم معزول ججوں کی بحالی کے بعد 31جولائی 2009ء کو سپریم کورٹ نے قرار دیا تھا کہ فنانس ایکٹ کے ذریعے ججوں کی تعداد میں اضافہ نہیں کیا جاسکتا ،اس کے لئے آئین میں ترمیم ضروری ہے ،سپریم کورٹ نے ججوں کی تعداد میں کیا گیا اضافہ کالعدم کرتے ہوئے ججز کی تعداد دوبارہ 17مقررکردی تھی ۔امریکہ میں 1789ء میں سپریم کورٹ کے ججوں کی تعداد 6مقرر کی گئی تھی ،1801ء میں اس میں کمی کرکے ججوں کی تعداد5کردی گئی ،1807ء میں ججوں کی تعداد 7اور1837ء میں 9جبکہ1863ء میں 10کردی گئی ، 1866ء میں ججوں کی تعداد کم کرکے7کردی گئی ،1869ء میں اضافہ کرکے سپریم کورٹ کے ججوں کی تعداد 9مقرر کی گئی ،اس سلسلے میں آئینی ترمیم تاحال نافذ العمل ہے اور گزشتہ 147سال سے امریکی سپریم کورٹ کے ججوں کی تعداد میں اضافہ نہیں کیا گیا اور یہ تعداد 1869ء سے9چلی آرہی ہے جبکہ امریکہ کی آبادی 32کروڑ سے بھی تجاوز کرچکی ہے ۔برطانیہ کی آبادی 6کروڑ 41لاکھ سے زائد نفوس پر مشتمل ہے اوربرطانوی سپریم کورٹ کے ججوں کی تعداد12ہے جن میں ایک صدر ،ایک نائب صدر اور 10ججز شامل ہیں ۔روایت کے مطابق برطانوی سپریم کورٹ میں 9ججز انگلینڈ ،2سکاٹ لینڈ اورایک شمالی آئرلینڈ سے لیا جاتا ہے ،ہمارے ہمسایہ ملک بھارت کی سپریم کورٹ میں اس وقت 26جج کام کررہے ہیں جبکہ بھارتی آئین میں سپریم کورٹ کے ججوں کی نشستوں کی تعداد 31مقرر ہے ،بھارتی سپریم کورٹ میں اس وقت ججوں کی 5آسامیاں خالی ہیں ،بھارت کی آبادی کم و بیش ایک ارب نفوس پر مشتمل ہے اور وہاں مقدمات کی تعداد پاکستان سے کئی گنا زیادہ ہے ۔سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن نے سپریم کورٹ میں ایڈہاک ججوں کی آسامیاں ختم کرنے اور مستقل ججز کی تعداد 17سے بڑھا کر19کرنے کی تجویز دی تھی تاہم سینیٹ نے ججز کی تعداد 26مقرر کرنے سے متعلق آئینی بل کی منظوری دی ہے جس پر وکلاء برادری تحفظات کا اظہار کررہی ہے ۔یہ امر قابل ذکر ہے کہ ایک ارب کی آبادی والے ملک بھارت کی سپریم کورٹ میں اس وقت 26جج کام کررہے ہیں جبکہ 18کروڑ کی آبادی کے ملک پاکستان میں بھی سپریم کورٹ کے ججوں کی تعداد26مقر رکی جارہی ہے ۔

مزید : صفحہ اول