سعودی عرب اور چین کے درمیان ایٹمی معاہدہ طے پاگیا

سعودی عرب اور چین کے درمیان ایٹمی معاہدہ طے پاگیا
سعودی عرب اور چین کے درمیان ایٹمی معاہدہ طے پاگیا

  


ریاض(مانیٹرنگ ڈیسک) چین اور سعودی عرب کے مابین سعودی عرب میں ایٹمی ریکٹرلگانے سمیت14اہم ترین معاہدے طے پا گئے ہیں۔ چین کے صدر ژی جن پنگ ان دنوں سعودی عرب کے دورے پر ہیں۔ انہوں نے سعودی فرماں روا شاہ سلمان سے ملاقات کی۔ اس کے علاوہ دیگر چینی اور سعودی حکام میں بھی ملاقاتیں ہوئیں۔ ان ملاقاتوں میں دونوں ممالک میں کئی شعبوں میں تعاون کو فروغ دینے پر اتفاق کیا گیا۔ چین اور سعودی عرب میں جو اہم معاہدے ہوئے ہیں ان میں ”سلک روٹ اکنامک بیلٹ“اور ”سمندری سلک روٹ“ سمیت دیگر شامل ہیں۔ چین نے سعودی عرب میں ایک ایٹمی ری ایکٹر لگانے کا بھی اعلان کیا ہے اور اس حوالے سے بھی دونوں ملکوں میں معاہدہ طے پا گیا ہے۔ شاہ سلمان اور ژی جن پنگ کی موجودگی میں سعودی عرب کے نائب ولی عہد اور وزیردفاع محمد بن سلمان اور چین کے چیئرمین نیشنل ڈویلپمنٹ اینڈریفارم کمیشن نے سلک روٹس اور نیوکلیئر ری ایکٹرکے معاہدوں پر دستخط کیے۔ صدر شاہ عبداللہ سٹی فار سائنس اور ٹیکنالوجی اور چینی وزیرخارجہ وینگ ژی نے سائنس اور ٹیکنالوجی کے شعبوں میں تعاون کے معاہدوں پر دستخط کیے۔ اس کے علاوہ تیل، دہشت گردی، سیٹلائٹ ٹیکنالوجی اور سیاحت سمیت دیگرمعاہدوں پر دستخط کیے گئے۔

مزید : بین الاقوامی