یوتھ آف پاڑہ چمکنی ضلع کرم کا پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ

یوتھ آف پاڑہ چمکنی ضلع کرم کا پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


پشاور(سٹی رپورٹر)یوتھ آف پاڑہ چمکنی ضلع کرم نے مقامی انتظامیہ کی جانب سے ٹیوب ویل بندکرنے اورعوام کے ساتھ نامناسب رویہ کے خلاف پشاورپریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیامظاہرین نے انتظامیہ کوپاڑہ چمکنی کے مسائل کے حل کیلئے ایک ہفتے کی مہلت دیدی،مسائل حل کرنے کی صورت میں اسلام آبادمیں احتجاجی دھرنادنے کااعلان کیا۔مظاہرے کی قیادت یوتھ آف پاڑہ چمکنی کے سربراہ محمدسلیم چمکنی،رفیع اللہ چمکنی،سعیداللہ خان قبائلی،محمدبلال اوردیگرکررہے تھے اس موقع پرمظاہرین نے ہاتھوں میں پلے کارڈزاوربینرزاُٹھارکھے تھے جس پرکرم انتظامیہ مخالف نعرے درج تھے۔مظاہرین کاکہناتھاکہ ضلعی انتظامیہ نے سنٹرل کرم میں آبادپاڑہ چمکنی قوم کے ساتھ سوتیلی ماہ جیساسلوک روارکھاہے جس کی وجہ سے وہاں کے عوام مایوسی پھیلی ہوئی ہے ان کاکہناتھاکہ سنٹرل کرم کے قوم پاڑہ چمکنی کے علاقہ زندگی ہرسہولیات سے محروم ہیں جہاں پرنہ ہسپتال ہے اورنہ ہی سکولزوصحت کے بنیادی سہولیات عوام کومیسرہے علاقے میں گزشتہ کئی سالوں سے پینے کے صاف پانی ناپیدہے جس کے حل کیلئے متعلقہ حکام کومتعددبارآگاہ بھی کرچکے ہیں لیکن مسئلہ جوں کے توں رہاہے انہوں نے کہاکہ پانی کامسئلہ حل کرنے کیلئے مقامی لوگوں اپنے مددآپ لدھاکے مقام پرٹیوب ویل پرکام شروع کیاتوانتظامیہ نے علاقہ مکینوں پرچھاپہ کرمتعددافرادکوگرفتارکیااورانہیں جیل بھیج دیااوران پرجیل تشددکی جوکہ کسی کربلاکے واقعہ سے کم نہیں ہے۔انہوں نے کہاکہ مقامی انتظامیہ نے گرفتارافرادسے تحریری طورپرضمانت لے لی کہ مذکورہ واقعہ کے خلاف کوئی آوازنہیں اُٹھائے گاانہوں نے گورنرخیبرپختونخوا،وزیراعلیٰ محمودخان اوردیگرمتعلقہ حکام سے مقامی انتظامیہ میں موجوداعلیٰ افسران اورواقعہ میں ملوث افرادکے خلاف نوٹس لینے کامطالبہ کیاہے انہوں نے یہ بھی مطالبہ کیاکہ پاڑہ چمکنی قوم کے بعض علاقوں میں آئی ڈی پیزکوبحال نہیں کیاان کوفوری بحال کرکے امدادی چیکس دی جائے۔اگرایک ہفتے کے اندرحکومت اورمقامی انتظامیہ نے پاڑہ چمکنی کے مسائل حل نہیں کی توپھرانتظامیہ کے خلاف قومی تحریک شروع کرکے اسلام آبادمیں اپنے مسائل کے حل کیلئے احتجاجی دھرنادئینگے۔