مدارس میں ہم نصابی سرگرمیوں کا فروغ وقت کی اہم ضرورت ہے ، مفتی غلام الرحمٰن

مدارس میں ہم نصابی سرگرمیوں کا فروغ وقت کی اہم ضرورت ہے ، مفتی غلام الرحمٰن

  

پشاور(سٹی رپورٹر)ملک کے معروف دینی درس گاہ جامعہ عثمانیہ پشاورکے زیر انتظام نیو کیمپس گلشن عمرچراٹ روڈ پبی میں دوروزہ آرٹ اینڈ فوڈ فیسٹول کا باقاعدہ افتتاح ہوا۔ جامعہ عثمانیہ پشاور کے میڈیا انچارج مفتی سراج الحسن کے مطابق اس حوالے آج گلشن عمر کیمپس میں پروقار تقریب کا انعقادکیا گیا جس سے جامعہ کے مہتمم مفتی غلام الرحمن اور ناظم تعلیمات مولانا حسین احمد، مولانا آصف محمود نے خطاب کیا۔مفتی غلام الرحمن نے اپنے خطاب میں کہا کہ مدارس کو عصری تقاضوں کا ادارک امت مسلمہ کودرپیش مسائل کے حل کے لیے ضروری ہے ۔ آج مسجد، مدرسہ اور داڑھی کو نفرت کی علامت بنا یا گیا ہے لہذا اہلِ مدارس کو معاشرتی تقاضوں کاادراک کرنا بہت ضروری ہے۔مدارس میں ہم نصابی سرگرمیوں کا فروغ وقت کی اہم ضرورت ہے۔ اس سے طلبہ کی تعلیمی صلاحیتوں میں مزید اضافہ ہوگا۔علماء معاشرے سے الگ تھلگ نہ رہے بلکہ کردار کے ذریعے دین کا دفاع کریں۔انہوں نے مزید کہا کہ اس مقابلے سے ہمارا بنیادی مقصد مدارس کے خلاف منفی پروپیگنڈہ ختم کرنا ہے۔مدارس کے خلاف منفی سوچ کی وجہ سے لوگ دین سے دورہورہے ہیں ہم کوشش کررہے ہیں کہ اس میں کسی طریقے سے کمی لائی جاء۔ لیکن ہم اس تاریخی نمائش کے ذریعے ثابت کریں گے کہ پختو ن قوم کی ثقافت بے حیائی پھیلانا نہیں بلکہ امن ، محبت اور ایک دوسرے کو ہمدردی کے پیغام سے بھر اپڑا ہے ۔ مولانا حسین احمد نے اپنے خطاب میں کہا کہ آ ج مدارس کے بارے طرح طرح کے شوک وشبہات پیدا کیے جارہے ہیں لیکن ہم لوگوں کو بتلانا چاہتے ہیں کہ دینی مدارس امن وسلامتی کے مراکز ہیں ۔ مفت میں شرح خواندگی بڑھانے میں کردار اداکررہے ہیں۔ کلچر شوکے نام پر پختون قوم کی ثقافت سے زیادتی ہورہی ہے ۔ ہم دینی مدارس کے طلبہ کوایک وسیع سوچ دے رہے ہیں ۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہم نصابی سرگرمیاں دین تعلیمات کے منافی نہیں ۔ نمائش میں ہر مکتب فکر اور شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد کوشرکت کی دعوت دی جائے گی ۔ یہ ایک تاریخی نمائش ثابت ہوگی ۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -