منشیات معاشر ے کا ناسور ،ختم کر کے دم لوں گا،شہریار آفریدی

منشیات معاشر ے کا ناسور ،ختم کر کے دم لوں گا،شہریار آفریدی

  

اسلام آباد (این این آئی) وزیرمملکت برائے داخلہ شہر یار آفریدی نے کہا ہے کہ ڈرگ مافیا میری آنے والی نسلوں سے کھیل رہا ہے،میری جان چلی جائے گی لیکن منشیات کے ناسور کو ختم کریں گے،بلوچستان میں افغانستان اور ایران کے بارڈر پر کوئی چیک اینڈ بیلنس نہیں،منشیات کے کاروبار میں ملوث لوگ سن لیں ہم ان کو عبرت کا نشان بنائیں گے،آج کا بچہ اگر نے ماں باپ کی نہیں مانتا تو وہ انسانیت کیلئے کیا کرے گا، جب انسان انسان نہ بنے اور عالم فاضل بن جائے پھر بھی کوئی فائدہ نہیں ہے۔ منشیات کے حوالے سے سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کہا جب ہماری گورنمنٹ آئی اور عمران خان نے مجھے یہ ذمہ داری دی تو بولا بہت کام کرنا پڑیگا ۔انہوں نے کہاکہ جب آپ حق کیلئے کھڑے ہوتے ہیں تو مشکل میں سب چھوڑ دیتے ہیں ،صرف اللہ کا ساتھ ضروری ہے آپ کے اپنے آپکو غلط کام سے روکتے ہیں ، جیسے مرغی اپنے بچوں کو اپنے پروں کے نیچے رکھتی ہے ایسے ہمارے والدین نے ہمیں رکھا تھا، پورا تعلیمی نظام دو جمع دو چار کے مفروضے سے چل رہا ہے ،ڈرگ مافیا میری آنے والی نسلوں سے کھیل رہا ہے۔ ہم نے پاکستان کا پیسہ پاکستانیوں پر لگانا ہے،جب تک ہم خود نہیں اٹھیں گے کوئی ہمیں عزت نہیں دے گا۔ چائلڈ پورنو گرافی بھی منشیات کی وجہ ہو رہی ہے۔ منشیات کی وجہ سے 72 گھنٹے تک بچے اپنے آپ پر قابو نہیں رکھ پاتے،اس قوم کو تقسیم کرنے کی ہر وقت کوشش کی جاتی ہے، ہم ایم فورس بنا رہے ہیں اور یوتھ کو انگیج کرنا ہے۔ ایجوکیشن میں ہم نے سائنس اور ٹیکنالوجی کو بالکل چھوڑا ہوا ہے، ہم نے زیادہ بہتر اخلاقیات کو اپنانا ہے، آئیں اس ملک کی نئی نسل کے بارے میں سوچیں۔ ایک مافیا کے خلاف ہمیں بولڈ ہونا پڑے گا ،جب آپ حق کی راہ پر چلتے ہیں تو ان کی کردار کشی کی گئی،ہم ہمت نہیں ہاریں گے اور ایسے لوگوں کو عبرت کا نشان بنا دیں گے۔

مزید :

صفحہ آخر -