ہم نے ماضی میں بھی فوجی عدالتوں کے قیام کی حمایت نہیں کی تھی

ہم نے ماضی میں بھی فوجی عدالتوں کے قیام کی حمایت نہیں کی تھی

  

جماعت اسلامی پاکستان کے مرکزی ڈپٹی سیکرٹری جنرل فرید احمد پراچہ نے کہا ہے کہ جب نئے چیف جسٹس نے یہ کہہ دیا ہے کہ وہ کم سے کم از خود نوٹس لیں گے اور عدالتی نظام کو بھی بہتر کریں گے تو پھر اس کے بعد فوجی عدالتوں کے قیام کی مزید ضرورت نہیں رہ جاتی کیونکہ یہ اس لئے قائم کی گئیں تھی کہ سپیڈی ٹرائل کیا جاسکے ۔ایشو آف دی ڈے میں گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ جہاں تک جماعت اسلامی کی جانب سے اس کی حمایت کا تعلق ہے تو جب اسمبلی کی اپوزیشن جماعتیں اس ایشو پر ہمارے ساتھ رابطہ کریں گی تو پھر ہماری مرکزی مجلس شوری اس پر اتفاق رائے سے فیصلہ کرے گی لیکن ہم نے ماضی میں بھی ان عدالتوں کے قیام کی حمائت نہیں کی تھی ۔

مزید :

صفحہ آخر -