سی پیک میں بلوچستان کو کچھ نہیں ملا ، صوبے کی ٹرقی اور لا پتا افراد کی بازیابی چاہتے ، اخترمینگل

سی پیک میں بلوچستان کو کچھ نہیں ملا ، صوبے کی ٹرقی اور لا پتا افراد کی ...

کوئٹہ(این این آئی) بلوچستان نیشنل پارٹی کے سربراہ اور رکن قومی اسمبلی سردار اختر مینگل نے کہا ہے کہ سی پیک میں بلوچستان کو کچھ نہیں دیاگیا،منی بجٹ میں بھی صوبے کیلئے ترقیاتی منصوبے نہیں رکھے گئے، ترقی کا فائدہ مقامی افراد کو ہوناچاہئے،پی ٹی آئی نے حکومت بنانے کیلئے ہم سے رابطہ کیا تھا اورہم نے حمایت کیلئے اپنے مطالبات رکھے،ہم ناراض لوگوں کو واپس لانا چاہتے ہیں۔نجی ٹی وی سے بات چیت کرتے ہوئے سردار اخترمینگل نے کہا کہ ہم ناراض لوگوں کو واپس لاناچاہتے تھے، کچھ لاپتا افراد بازیاب ہوئے اورکچھ مزیداٹھالئے گئے،ہم بلوچستان کے مسائل کاحل چاہتے ہیں اور اس مقصد کیلئے و سائل کااختیارصوبوں کو دیاجائے۔اخترمینگل نے کہا کہ صوبوں کواعتمادمیں لئے بغیردوسرے ممالک سے معاہدے ہورہے ہیں، پی ٹی آئی حکومت کے اتحادی نہیں حمایتی ہیں، پاکستان میں وزرائے اعظم کے اختیارات محدودرہے۔بی این پی رہنما نے کہاکہ پانی نہیں ہوگا توزراعت کہاں سے ہوگی؟ کیا وجوہات ہیں ہمارے مطالبات پرعملدرآمد نہیں ہورہا؟ جبکہ ہم اپنے لوگوں کو بھی جوابدہ ہیں۔

اختر مینگل

مزید : علاقائی