عدالت کابچے ماں کے حوالے کرنے کاحکم ،دادی اور پھوپھی نے چھین لئے

عدالت کابچے ماں کے حوالے کرنے کاحکم ،دادی اور پھوپھی نے چھین لئے

لاہور(نامہ نگار)سیشن عدالت نے 2بچے ماں کے حوالے کرنے کاحکم دیا تو دادی اور پھوپھی نے بچے چھین لئے ،پولیس اہلکاردرمیان میں آئے تو دادی نے انہیں کی بھی پٹائی کر دی اور بچے لے کر فرارہوگئی ۔ایڈیشنل سیشن جج سجاول خان نے دو بچے درخواست گزار ماں جمیلہ یونس کے حوالے کرنے کا حکم دیاتو پولیس اہلکارماں اور بچوں کو احاطہ عدالت سے باہر چھوڑنے جا رہی تھے، اسی دوران بچوں کی دادی نزیراں بی بی اور پھوپھی لبنیٰ نے ماں سے بچے چھین لئے ،7سالہ عبداللہ اور 6 سالہ صبح نور نے ماں سے ساتھ جانے سے انکار کر دیا تھا ،بچے مسلسل دادی اور پھوپی کے ساتھ جانے کیلئے روتے رہے ،دادی اور پھوپھی کی جانب سے بچے چھیننے پر پولیس نے مزاحمت کی تو دادی نے پولیس پر بھی تھپڑبرسادیئے اور بچے لے کر فرارہوگئی ، بچوں کی دادی کا کہنا تھا کہ درخواست گزار خاتون نے طلاق لے کر دوسری شادی کر لی تھی ،اس کاسابق خاوند فوت ہو چکا ہے تو جائیداد کیلئے بچے حاصل کر رہی ہے جبکہ بچوں کی ماں کا کہنا ہے کہ بچوں کی دادی اور پھوپھی نے بچے غواء کئے ہیں ان کیخلاف مقدمہ درج کراؤں گی۔

مزید : علاقائی