کرشنگ سیزن میں چینی 7روپے فی کلو مہنگی ، مافیامالا مال

کرشنگ سیزن میں چینی 7روپے فی کلو مہنگی ، مافیامالا مال

  

ملتان( سپیشل رپورٹر) شوگر ملز مافیا نے کریشنگ سیزن کے آغاز ہی سے چینی کے نرخوں میں 7روپے فی کلو گرام اضافہ کردیا ہے جبکہ گنا حکومت کے مقرر کردہ قیمت سے 20سے 25روپے فی من سستاخرید کیاجارہاہے جس سے نہ صرف عام لوگوں کونقصان پہنچایا جارہا ہے بلکہ کسانوں کوبھی لوٹا جارہا ہے جس پر حکومت اور حکمران خاموش تماشائی بنے ہوئے ہیں ایگری فورم پاکستان کے وائس چیر مین راؤ افسر نے کہا ہے کہ پاکستان کی تاریخ میں پہلی دفعہ کماد (بقیہ نمبر10صفحہ12پر )

کی کریشنگ کے دوران چینی 60روپے فی کلوگرام فروخت کی جارہی ہے جس کاحکمرانوں کوباخوبی علم ہے کہ اہم سیاسی شخصیات کی شوگر ملز رواں سال بے تحاشہ منافع کمارہے ہیں حکومت نے گنے کی فی من قیمت 180روپے مقرر کی جبکہ کسی بھی کاشتکار کو130روپے فی من سے اوپر نرخ نہیں مل رہے ہیں جبکہ کسان چینی 60روپے فی کلو گرام خرید کررہے ہیں حالانکہ چینی کے ریٹ سیزن میں کم ہوجاتے ہیں کریشنگ سیزن کے بعد چینی مہنگی ہوتی تھی اب کریشنگ سیزن کے دوران چینی کے نرخوں میں تیزی کارجحان پیدا کیا جارہاہے عوام مہنگی چینی خریدکرنے لگی ہے آف سیزن میں چینی کے نرخوں کاشدید ترین بحران برپا کردیا جانے کاامکان ہے۔

کرشنگ سیزن

مزید :

ملتان صفحہ آخر -