قبائلی ضلع مہمند غلنئی میں تحریک انصاف کا مشاورتی جرگہ

  قبائلی ضلع مہمند غلنئی میں تحریک انصاف کا مشاورتی جرگہ

  



مہمند (نمائندہ پاکستان) مہمند، قبائلی ضلع مہمند غلنئی میں تحریک انصاف کا ایک مشاورتی جرگہ منعقد ہوا۔ جرگے میں قبائلی ضلع مہمند کے عوام کو درپیش مشکلات پر بحث ہوئی۔ جس میں صحت، تعلیم، روزگار، پینے کیلئے پانی، بجلی کی طویل لوڈشیڈنگ کے خاتمے و دیگر مسائل پر مشاورت ہوئی۔ تفصیلات کے مطابق قبائلی ضلع مہمند تحصیل حلیمزئی غلنئی چیئر مین سٹینڈنگ کمیٹی برائے سیفران ایم این اے ساجد خان مہمند کی رہائش گاہ پر پی ٹی آئی کا ایک مشاورتی جرگہ منعقد ہوا۔ جرگے سے ایم این اے ساجد خان مہمند، پی ٹی آئی رہنماء نوید خان و دیگر نے کہا کہ موجودہ حکومت نے انضمام کے بعد یہاں کے لوگوں کی تقدیر بدلنے کیلئے ٹھوس منصوبہ بندی شروع کی گئی ہے۔ جس میں ضلع مہمند میں یونیورسٹی کیمپس کا قیام، پاک افغان گرسل بارڈر کو تجارت کیلئے کھولنے، صحت و تعلیم، بے روزگاری کے خاتمے کیلئے مقامی نوجوانوں کو روزگار کی فراہمی، غریب لوگوں کیلئے صحت انصاف کارڈ، مساجد کی سولرائزیشن، سپورٹس گراؤنڈز کی تعمیر، اے ایف پی پروگرام، مہمند ڈیم،کیڈٹ کالج، ریسکور 1122 میں مقامی نوجوانوں کو نوکریاں دینے، بجلی کے چودہ فیڈرز کی منظوری، خویزئی بائیزئی، امبار میں ہائی سکولز کا قیام، بائیزئی گریڈ سٹیشن کیلئے 85 کروڑ روپے کی منظوری، دریائے کابل سے لفٹ کنال سکیم و دیگر منصوبوں کی تکمیل کیلئے عملی اقدامات جاری ہے۔ جو کہ اس پانچ سال میں مہمند قوم کی تقدیر بدلے گا۔ اور جن منصوبوں پر عدالتی سٹے ہے وہ بھی جلد ختم ہو جائیگی۔ اور سالانہ ترقیاتی منصوبے میرٹ پر تقسیم کئے جائینگے۔ کسی کے ساتھ نا انصافی نہیں ہوگی۔ لیویز پولیس میں بھی شناختی کارڈ پر بھرتی کی جائیگی۔

مزید : پشاورصفحہ آخر