تیمرگرہ پریس کلب کے سینئر صحافی کے گھر پر سرچ وارنٹ کے بغیر چھاپہ

تیمرگرہ پریس کلب کے سینئر صحافی کے گھر پر سرچ وارنٹ کے بغیر چھاپہ

  



تیمرگرہ (بیورورپورٹ) تیمرگرہ پولیس نے تیمرگرہ پریس کلب کے سنئیر صحافی کے گھر پر سرچ وارنٹ کے بغیر گھر پر چھاپہ مار کر گھر کی چادر اور چار دیواری کا تقدس پامال کیا سنئیر صحافی بہرہ مند سید نے بتا یا کہ ان کاقریبی رشتہ داروں کے ساتھ گھریلوی معمولی تنا زعہ چلا آرہا تھا کہ اس دوران تیمرگرہ پولیس کے انوسٹی گیشن اہلکار شاہدنے دیگر پولیس اہلکاران نے غیر قانونی طور پر کسی سرچ ورنٹ کے بغیر ان کے گھر پر چھاپہ مار کر چادر اور چار دیواری کا تقدس پا مال کیا حا لانکہ اسی روز میں نے پولیس کو رضا کرانہ طور پر گرفتاری دی تھی انھوں نے کہا کہ ان کے خلاف ایف ائی آر من گھڑت اور بے بنیاد اس وجہ سے تھی کہ اس بے بنیاد ایف ائی آر میں ان کے والد جو 20 سال قبل وفات پا چکے ہیں پر بھی مقدمہ درج کیا گیا تھا انھوں نے کہا کہ مذکورہ پولیس اہلکاران نے ان کے بھائی جواہر سید کی قومی شناختی کارڈ بھی غائب کیا ہے اس نا انصافی پر انھوں نے ڈی پی او لوئر دیر کو بھی درخواست دی تھی کہ اس من گھڑت اور بے بنیاد ایف ائی آر درج کرنے والوں کے خلاف کار وائی کی جائی لیکن اس پر ڈی پی او نے بھی کو ئی کار وائی نہیں کی صحافی بہرہ مند سے نے پشاور ہائی کورٹ کے چیف جسٹس،ائی جی پی، ڈی ائی جی ملاکنڈسے مطا لبہ کیاکہ ان کے گھرپر سرچ ورنٹ کے بغیر غیر قانونی چھا پہ کی انکوائری کی جائے اور کے پی کی مثالی پولیس سے کالی بھیڑوں کا خاتمہ کیا جائے۔

چھاپہ

مزید : پشاورصفحہ آخر