صوبائی وزیر اور سیکرٹری تعلیم سے مذاکرات مثبت رہے، رانا لیاقت علی

صوبائی وزیر اور سیکرٹری تعلیم سے مذاکرات مثبت رہے، رانا لیاقت علی

  



لاہور(پ ر)پنجاب ٹیچرز یونین کے مرکز ی جنرل سیکرٹری رانا لیاقت علی نے ضلعی عہدیداران سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ صوبائی وزیر تعلیم اور سیکرٹری تعلیم سے ہونیوالی ملاقات و مذاکرات مثبت رہے۔ صوبائی وزیر تعلیم کے حکم پر محکمہ سکولز پنجاب نے سیکنڈری سکول ایجوکیٹرز کی پنجاب پبلک سروس کمیشن کے بجائے متعلقہ اتھارٹیز سے ریگولر کروانے کے لئے حتمی سفارشات تیار کر لی ہیں تا کہ یہ سفارشات وزیر تعلیم کی وساطت سے وزیر اعلی پنجاب کو بھجوا کر صوبائی کابینہ سے ریگولر ائزیشن ایکٹ 2019 میں ترمیم کروائی جا سکے۔ جس کو کچھ وقت لگے گا۔جبکہ صوبائی وزیر تعلیم نے یہ بھی یقین دہانی کروائی ہے کہ کسی بھی سیکنڈری سکول ایجوکیٹر کو ملازمت سے نکالا نہیں جائے گا۔ یہ تمام پیش رفت تحریک اساتذہ کے 29اگست اور 20نومبرکے بھر پور احتجاج کا نتیجہ ہے۔کچھی عناصر سستی شہرت حاصل کرنے کے لئے منفی پراپیگنڈہ کے ذریعے اساتذہ برادری کو تقسیم کرنے کے لئے کوشاں ہیں۔

حالانکہ تحریک اساتذہ کے راہنماؤں اللہ بخش قیصر، سید سجاد اکبر کاظمی، چوہدری سرفراز، امتیاز عباسی، چوہدری صفدر، رائے مصطفی ریاض، لطیف شہزاد، وحید مراد یوسفی نے اساتذہ برادری کے وسیع تر مفاد میں 21جنوری کو لاہور میں ہونیوالا آل پنجاب سیکنڈری سکول ایجوکیٹرز کنونشن ملتوی کر دیا کہ حکومت وقت کو اساتذہ برادری کے متحد ہونے کا پیغام دیا جاسکے لیکن بعض عناصر اپنے گریبان میں جھانکنے کی بجائے اساتذہ برادری میں تفریق پیدا کرنے کے درپے ہیں۔احتجاج کے بعد مذاکرات کا عمل شروع ہوتا ہے ا ور اب بھی یہ ہی ہوگا لہذا ہم حالات پر نظر رکھے ہوئے ہیں اگر کہیں رکاوٹ یا اساتذہ برادری کے مفادات کا سودا ہوتا ہوا نظر آیا تو تحریک اساتذہ دوبارہ میدان عمل میں ہوگی کیونکہ تحریک اساتذہ کی منزل مخصوص افراد کی پرموشن نہیں بلکہ اساتذہ کامفاد ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1