خالدمقبول کابینہ میں واپسی نہیں چاہتے،خٹک،سنجیدہ قدم اٹھائیں،متحدہ

    خالدمقبول کابینہ میں واپسی نہیں چاہتے،خٹک،سنجیدہ قدم اٹھائیں،متحدہ

  



نوشہرہ،کراچی(نیوزایجنسیاں)وفاقی وزیر دفاع پرویز خٹک نے کہا ہے کہ متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) کے کنوینر خالد مقبول صدیقی وفاقی کابینہ میں واپسی نہیں آنا چاہتے۔نوشہرہ کے علاقے مانکی شریف میں اپنی رہائش پر غیر رسمی بات چیت کرتے ہوئے پرویز خٹک کا کہنا تھا کہ اتحادی جماعتوں کے ساتھ نتیجہ خیز مذاکرات ہوئے ہیں جس کے بعد ان جماعتوں کے جائز مطالبات وزیراعظم عمران خان کے سامنے پیش کردیے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ایم کیو ایم کے کنوینر خالد مقبول صدیقی نے کراچی میں حکومتی مذاکراتی کمیٹی کے سامنے جو مطالبات رکھے وہ سب کے اجتماعی مسائل ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ ایم کیو ایم سے کامیاب مذاکرات ہوئے ہیں لیکن خالد مقبول صدیقی خود کابینہ میں واپس نہیں آنا چاہتے، ایم کیو ایم وزارت کیلئے دوسرا نام دے گی۔ دوسری طرف خالد مقبول صدیقی نے کہا ہے کہ کراچی کے امن سے پورے پاکستان کا امن منسلک ہے، کراچی کے حقوق کی جدوجہد سے پیچھے نہیں ہٹیں گے۔تفصیلات کے مطابق ایم کیو ایم پاکستان کے کنوینر ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وفاق سنجیدہ قدم اٹھائے، حکومت سے ہم نے جو وعدہ کیا وہ پورا کیا، مہنگائی پر قابو پانا حکومت کی ذمہ داری ہے۔انہوں نے کہا کہ شہری علاقے انصاف کے متقاضی ہیں، سندھ سے دارالحکومت کو تو لے گئے مگر کراچی اپنی جگہ موجود ہے، کراچی قائد اعظم کا بنایا ہوا دارالحکومت ہے، آج بھی کراچی معاشی اور صنعتی دارالحکومت ہے، دیکھنا ہوگا کہ 11 سال کی معاشی دہشت گردی کو حکومت کتنا سنجیدہ لیتی ہے۔خالد مقبول نے کہا کہ معیشت جس حال میں ملی تھی وہ صورت حال بہت خراب تھی، شور مچائے بغیر دلیل کے ساتھ اپنا مقدمہ جیتیں گے، کراچی کی ترقی کے بغیر پاکستان کی ترقی ناممکن ہے، سندھ کی تقسیم نہیں ہوسکتی اسے عوام اور کارکنوں نے جوڑا ہے۔

خالد مقبول

مزید : صفحہ اول