شدید دھند، فلائٹ شیڈول متاثر، سردی بڑھ گئی، ٹریفک حادثات میں 5افراد جاں بحق

شدید دھند، فلائٹ شیڈول متاثر، سردی بڑھ گئی، ٹریفک حادثات میں 5افراد جاں بحق

  



لاہور،کراچی، کوئٹہ،الپوری(مانیٹرنگ ڈیسک،نیوزایجنسیاں)پنجاب کے میدانی علاقوں میں سردی بڑھنے سے دھند میں اضافہ ہو گیا۔ صبح کے وقت دھند بڑھنے سے موٹروے کئی مقامات سے بند کی گئی، فلائٹس کا شیڈول بھی متاثر ہوا۔ محکمہ موسمیات نے شمالی علاقوں، بلوچستان میں موسم شدید سرد رہنے کی پیشگوئی کی ہے، کشمیر میں بارش اور برفباری کا امکان ہے۔ ہر طرف سفید دھوئیں کے بادل، ہر منظردھندلا گیا۔ حد نگاہ انتہائی کم، سردی بڑھنے سے سندھ اور پنجاب کے میدانی علاقوں میں صبح اور شام کے اوقات میں دھند کا راج ہے۔ لاہور شہر کو شدید دھند نے اتوار کی صبح اپنی لپیٹ میں لئے رکھا۔قومی شاہراہ پر لاہور، اوکاڑہ، چیچہ وطنی اور دیگر کئی علاقوں میں شدید دھند چھائی رہی۔ موٹروے ایم ٹو، تھری، فور کو دھند کے باعث بند کیا گیا جسے دھند کم ہونے پر کھول دیا گیا۔ دھندکے باعث لاہور ایئرپورٹ پر فلائٹ آپریشن بھی متاثر ہوا، پروازوں میں تاخیر سے مسافروں کو مشکلا ت کا سامنا کرنا پڑا۔محکمہ موسمیات نے کوئٹہ میں اکیس اور بائیس جنوری کو شدید برفباری اور بارش کی پیشگوئی کی ہے، ڈپٹی کمشنر کوئٹہ نے احتیاطی تدابیر اختیار کرنے اور غیر ضروری سفر سے گریز کرنے کیلئے تھریٹ الرٹ جاری کیا ہے۔ادھرسائبیرین ہواؤں کی رفتار بڑھنے سے کراچی میں سردی کی شدت میں اضافہ ہوگیا۔اتوار کو شمال مشرقی سائبیرین ہواؤں کی رفتار بڑھنے کے سبب سردی کی شدت میں اضافہ رہا، ہواؤں کی زیادہ سے زیادہ رفتار 28 کلومیٹر فی گھنٹہ ریکارڈ ہوئی، کم سے کم پارہ گزشتہ روز کے مقابلے میں 2 ڈگری کمی سے 9.5 ریکارڈ ہوا، اتوار کو دھند کے باعث حد نگاہ بھی متاثر ہوئی۔محکمہ موسمیات کے مطابق آئندہ 24گھنٹوں کے دوران بلوچستان کے مختلف علاقوں میں بارش اوربرفباری کاامکان کوئٹہ،مستونگ، قلات،قلعہ عبداللہ،قلعہ سیف اللہ،زیارت،ژوب میں برفباری کی پیشگوئی محکمہ موسمیات کے مطابق وادی کوئٹہ میں آج کم سے کم درجہ حرارت منفی 8 ڈگری سینٹی گریڈ،دالبندین منفی 4،ژوب منفی 2 اورنوکنڈی میں منفی1ڈگری سینٹی گریڈ،قلات میں کم سے کم درجہ حرارت منفی11ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈکیا گیا۔ شانگلہ میں خشک سردی کی شدیدبر قرار،خون جما دینے والی سردی سے نظام زندگی سخت متاثر۔بجلی نظام بحال نہ ہوسکا۔برف جمنے سے مین شاہراؤں پر ٹریفک کی روانی میں شدید مشکلات کا سامنا۔ شانگلہ کے داخلی راستوں شانگلہ ٹاپ تا الپوری تا کروڑہ،شانگلہ ٹاپ تا خوازہ خیلہ سمیت ضلعے کی اندرونی سڑکیں پانچویں روز بھی منجمد رہیں۔ لوگوں کی امد و رفت میں مشکلات بڑھ گئیں، گھنٹہ کا سفر گھنٹوں میں طے کرنا پڑتا ہے۔ ضلعی انتظامیاں،متعلقہ ٹھیکیدار اور محکموں کی غفلت کے باعث سڑکوں کی صفائی درست نہ ہونے کی وجہ سے موسم صاف ہوتے ہی تمام رابطہ سڑکوں پر برف جم گئی، ضلعی انتظامیہ شانگلہ اور ٹھیکیداران غائب رہیں۔عوام سراپا احتجاج بن گئے۔

شدیددھند

گجرات،پھلرواں (بیورورپورٹ،نیوزایجنسیاں) شدید دھند پانچ انسانی جانیں نگل گئی۔تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ائیر پورٹ سے قریبی رشتہ دار کو لینے جانے والے گجرات کے دو افراد ٹریفک حادثے میں جاں بحق ہو گئے تفصیلات کے مطابق چچا مدثر حسین اور بھتیجا ولید حسین کار پر قریبی رشتہ دار کو لینے اسلام آباد ائیر پورٹ جا رہے تھے گاؤں کوٹ الہ بخش کے قریب شدید دھند کے باعث بے قابو ہو کر ٹرالے سے گاڑی جا ٹکرائی جس کے نتیجے میں دونوں موقع پر ہی جاں بحق ہو گئے دونوں کو مقامی قبرستان میں سپردخاک کر دیا گیا ہے پولیس واقعہ کی تحقیقات کررہی ہے۔دوسری طرف پھلرواں کے نواحی علاقے چکیاں کے قریب ایک کار لکڑی سے لوڈ ڈ ٹرالی سے ٹکرا گئی جسکے نتیجے میں کار سوار تین افراد جاں بحق ہوگئے۔ کارسوار منڈی بہاؤالدین سے بھلوال جارہے تھے کہ بدقسمتی سے انکی کار لکڑی سے لوڈ ٹرالی سے ٹکرا گئی جسکے نتیجے میں تین افراد قمر،جنید،شاذیب موقع پر جاں بحق ہوگئے۔ حادثہ شدید دھند کے باعث پیش آیا۔تینوں منڈی بہاؤالدین کے رہائشی ہیں۔ واقعہ کی اطلاع ملتے ہی علاقے میں کہرام مچ گیا۔

ٹریفک حادثات

مزید : صفحہ اول