حکومت میں بیٹھے لوگ خدا کا خوف کھائیں،اسحاق ڈار

حکومت میں بیٹھے لوگ خدا کا خوف کھائیں،اسحاق ڈار

  



اسلام آباد (آئی این پی)پاکستان مسلم لیگ (ن) کے مرکزی رہنماء سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے کہا ہے کہ ہماری بد قسمتی ہے کہ ہم ملکی تاریخ کے بدترین معاشی دور میں ہیں، بتایا جائے کہ نون لیگ اس حکومت کے لئے ایسی کیا مشکل چھوڑ گئی تھی جس سے پہلے ہی سال میں اکانومی گروتھ 5.8 سے 3.3 پر آگئی،جس ملک کی گروتھ 2.4 فیصد اور آبادی کی شرح 2.5 فیصد ہوگی تو ایسی صورتحال میں مہنگائی، بے روزگاری اور غربت جیسے تمام مسائل سامنے آئینگے، حکومت میں بیٹھے لوگ خدا کا خوف کھائیں،نئے تجربے نہ کریں، اتوار کو نجی ٹی وی پراگرام میں گفتگو کرتے ہوئے اسحاق ڈار نے کہا کہ اس حکومت نے ملک کا ستیاناس کر دیا ہے، ملک کا قرضہ ساڑھے تین ہزار ارب تک بڑھا دیا ہے، حکومتی اقدامات کی وجہ سے ملکی معیشت تباہ ہوچکی ہے۔سابق وزیر خزانہ کا کہنا تھا کہ ہماری بد قسمتی ہے کہ ہم ملکی تاریخ کے بدترین معاشی دور میں ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ عمران نیازی کا ملائشیا کے مسائل کے حوالے سے علم ویسا ہی ہے جیسا جرمنی اور جاپان کا مشترکہ بارڈر، ڈاکٹر مہاتیر محمد اپنی سابقہ حکومت کے مسائل اور خاتمے کی وجہ کرنسی کی ڈی ویلیوایشن بتا چکے ہیں جسے مشہور امریکی فنڈ کی مداخلت سے منسوب کیا۔ سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ٹویٹ کرتے ہوئے اسحاق ڈار نے کہا کہ عمران نیازی نے تو خود وہی ڈی ویلیوایشن کا گھنانا کھیل پاکستان میں رچایا جس کے نتیجے میں مہنگائی کا طوفان آچکا ہے۔

اسحاق ڈار

مزید : صفحہ آخر