30سالوں میں 1989آرڈیننس جاری ہوئے، 445کی تعداد کیساتھ مشرف دور سرفہرست

30سالوں میں 1989آرڈیننس جاری ہوئے، 445کی تعداد کیساتھ مشرف دور سرفہرست

  



اسلام آباد (آن لائن) پاکستان میں گزشتہ30 سالوں کے دوران 1989 آرڈیننس جاری کئے گئے جن میں سب سے زیادہ آرڈیننس مشرف دورمیں 445 آرڈیننس جاری ہوئے،سال2002 میں سب سے زیادہ137 جبکہ 2017 میں سب کم صرف2 آرڈیننس جاری کئے گئے۔ 2002 میں 137 آرڈیننس جاری کئے گئے۔آن لائن کے پاس دستیاب دستاویزات کے مطابق ملکی تاریخ میں سب سے پہلے 1989 میں 14 آرڈیننس جاری کئے گئے،1990 میں 18،1991 میں 43،1992 میں 22،1993 میں 48،1994 میں 93،1995میں 133،1996 میں 125،1997 میں 54،1998 میں 22 آرڈیننس جاری ہوئے۔پرویز مشرف کے دس سالہ دور میں سب سے زیادہ 445 آرڈیننس جاری کئے گئے ،1999 میں 24،2000 میں 66،2001 میں 67،2002 میں 137،2003 میں 5،2004 میں 5،2005 میں 26،2006 میں 43،2007 میں 72 آرڈیننس شامل ہیں۔پیپلزپارٹی کے دور حکومت میں 2008 سے 2012 ء تک 102 آرڈینس جاری کئے گئے،2008 میں 09،2009 میں 61،2010 میں 18،2011 میں 6،2012 میں 8آرڈیننس جاری کئے گئے۔2013 سے 2018 تک مسلم لیگ (ن) کے دورمیں 43 آرڈیننس جاری کئے گئے،2013 میں 10،2014 میں 8،2015 میں 18،2016 میں 5،2017 میں صرف2 آرڈیننس جاری ہوئے جبکہ تحریک انصاف کی حکومت نے اقتدار سنبھالنے سے لیکر آج تک 36 آرڈیننس جاری کر چکی ہے،2018 میں 13 جبکہ 2019 میں 23 آرڈیننس جاری ہوئے۔

آرڈیننس جاری

مزید : صفحہ آخر