حکومت مہنگائی مافیا اور ذخیرہ اندوزوں کیخلاف بھرپور ایکشن لے‘ مسز شمیلہ اسلم

  حکومت مہنگائی مافیا اور ذخیرہ اندوزوں کیخلاف بھرپور ایکشن لے‘ مسز شمیلہ ...

  



وہاڑی(بیورو رپورٹ‘ نمائندہ خصوصی) مسلم لیگ (ن) کی سابق ایم پی اے مسز شمیلہ اسلم نے کہا ہے کہ چینی مافیا کے بعد اب آٹا مافیا بھی بے لگام ہوگیا ہے چندماہ میں  فی (بقیہ نمبر34صفحہ12پر)

کلو آٹے کی قیمت  40سے 70روپے ہو جانا عوام کے منہ سے روٹی کا آخری نوالہ بھی چھین لینے کے مترادف ہے آٹے جیسی بنیادی اور روزمرہ  استعمال کی چیز کی مہنگائی کی ذمہ دار حکومت اور مہنگائی کنٹرول کرنے والے ادارے ہیں ا قتدار کے ایوانوں میں بیٹھے حکمرانوں کو عوام کی مشکلات مسائل اور تکالیف کا کوئی احساس نہیں ہے آٹے کی مہنگائی سے براہ راست ہر گھر اور ہر فرد متاثر ہو رہا ہے ذخیرہ اندوزوں کو بے لگام ہونے پر عبرت ناک سزا دی جائے اور آٹا مافیا کے خلاف فوری کاروائی کی جائے ان خیالات کااظہار انہوں نے اپنے آفس میں لیگی خواتین اور کارکنوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ متعلقہ محکموں کی غفلت و لاپرواہی ملکی غیر مستحکم صورتحال اور حکومتی نا اہلی کے باعث اب عام آدمی کے منہ سے روٹی کا نوالہ بھی چھین لینے کی سازش ہو رہی ہے۔ گذشتہ چھ ماہ کے دوران آٹے کی فی کلو قیمت پچاس روپے سے بڑھ کر ستر روپے فی کلو تک پہنچ چکی ہے پاکستان گندم کے معاملے میں خود کفیل ہے اس کے باوجود چھ ماہ کے دوران آٹے کی قیمتوں میں ہوشربا اضافہ عوام دشمنی پر مبنی ہیآٹے اور گندم کی خریدو فروخت کے حوالے سے قیمتوں کے تعین کے لئے صوبے میں جو طریقہ کار رائج ہے وہ کمزور حکومتی رٹ کے باعث ختم ہو چکا ہے جس کی وجہ سے دوکاندار من مانے داموں اپنی چیزیں فروخت کرنے کے لئے آزاد ہیں ہمارا مطالبہ ہے کہ حکومت فوری مہنگائی کو کنٹرول کرے ذخیرہ اندوزوں اور مہنگائی مافیا کو لگا م دے منافع خوروں کے خلاف فوری ایکشن لیا جائے ورنہ غریب اور غریب ترین طبقات کی زندگی خطرے میں پڑجائے گی

مزید : ملتان صفحہ آخر