متعصب حکومت کراچی کے اداروں پر قبضہ کررہی ہے: ڈاکٹر سلیم حیدر

  متعصب حکومت کراچی کے اداروں پر قبضہ کررہی ہے: ڈاکٹر سلیم حیدر

  



کراچی (اسٹاف رپورٹر) مہاجر اتحاد تحریک کے چیئرمین ڈاکٹر سلیم حیدر نے کہا ہے کہ سندھ کی متعصب صوبائی حکومت کراچی کے اداروں پر قبضے کرکے وہاں کام کرنے والے مہاجروں کو ہراساں کررہی ہیں۔ ایک منصوبے کے تحت سندھ کے پسماندہ قبائلی علاقوں سے کم تعلیم یافتہ لوگوں کو لاکر ان اداروں میں لگایا جارہا ہے اور ان میں برسوں سے کام کرنے والے مہاجر افراد کو سندھ کے دور دراز علاقوں میں تبادلے کئے جارہے ہیں۔ وہ کراچی کے مختلف اداروں میں کام کرنے والے مہاجروں کے وفود سے بات چیت کررہے تھے۔ ڈاکٹر سلیم حیدر نے کہاکہ مہاجروں کے ساتھ اس طرح کا ظلم کیا جارہا ہے جس طرح اسرائیلی فلسطینیوں کے ساتھ کررہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ بدقسمتی سے مہاجروں کے تحفظ اور مہاجر حقوق کی بات کرنے کے ذمہ داروں نے بھی اس حوالے سے مہاجروں کو سوائے مایوسی کے کچھ نہیں دیا ہے۔ اگر فوری طورپر مہاجروں کو ان کے جائز حقوق اور ان کی ملازمتوں کا تحفظ کو یقینی نہ بنایا گیا تو پھر مہاجروں میں پائی جانے والی بے چینی سنگین صورتحال بھی اختیار کرسکتی ہے۔ انہوں نے کہاکہ آج حالت یہ ہوگئی ہے کہ کسی سرکاری اور نیم سرکاری ادارے میں مہاجر نوجوانوں کو نوکری دیئے جانے کا عمل مکمل طورپر بند ہوگیا ہے۔ پہلے ذوالفقار علی بھٹو نے کوٹہ سسٹم لگاکر مہاجروں کو سرکاری اداروں اور سرکاری یونیورسٹیوں اور کالجوں سے دور کیا اور اب موجودہ حکومت اسی مشن کو آگے بڑھارہی ہے جس کے باعث مہاجروں میں احساس محرومی انتہا کو پہنچ گئی ہے اور اب مہاجر خود اپنے ہی شہروں میں اجنبی بن کر رہ گئے ہیں۔

سلیم حیدر

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر