آٹے کی قیمتوں کامسئلہ دوروزمیں حل ہوجائے گا،سندھ حکومت

آٹے کی قیمتوں کامسئلہ دوروزمیں حل ہوجائے گا،سندھ حکومت

  



کراچی(اسٹاف رپورٹر)سندھ کے وزیرزراعت محمد اسماعیل راہو نے کہا ہے کہ وفاقی حکومت پڑوسی ملک کوگندم نہ بھیجتی توآج ملک میں گندم کا بحران پیدا نہ ہوتا،وفاقی حکومت عوام کو بتائے کہ پنجاب،بلوچستان اور کے پی کے میں آٹے کا بحران کیوں ہے گندم کہا گئی۔اسماعیل راہو نے وفاقی وزراء کے بیانوں پر اپناردعمل دیتے ہوئے کہا کہ کے پی کے میں نان بائی ہڑتال پر ہیں کیااس کی ذم داربھی سندھ حکومت ہے؟۔وفاقی وزرا بیان بازی کی بجائے بحران کوختم کرنے پر کام کریں۔انہوں نے کہا کہ لاڑکانہ،سکھر اور ٹھٹھہ میں گندم کا ذخیرہ موجود ہے،منگل یا بدھ کو سندھ میں آٹے کی قیمتوں کا مسئلہ حل ہوجائے گا،انہوں نے کہاکہ سندھ میں دو ماہ بعد گندم کی کٹائی شروع ہوجائیگی۔گندم کی سپلا ئی کا کام کرلیں گے۔ابھی بھی سندھ کے پاس 350 لاکھ ٹن گندم کاذخیرہ موجودہے۔کراچی میں آٹے کی سپلائی میں تھوڑا بحران آیا۔اسماعیل راہو نے کہا کہ موجودہ حکومت نے ملک کو بحرانستان بنادیا ہے۔حکومت اپنی پالیسیان بہتر کرنے کی بجائے اتحادیوں کو منانے میں مصروف ہے۔عوام کی کوئی فکر نہیں ہے،ملک میں آٹے کامصنوعی بحران کی ذمہ داروفاق ہے۔سندہ حکومت ذخیرہ اندوزی اورمنافع خوروں کے خلاف کارروائی کررہی ہے۔

مزید : صفحہ اول