اب سعودی عرب میں نماز کے اوقات میں دکانیں بند نہیں کی جائیں گی

اب سعودی عرب میں نماز کے اوقات میں دکانیں بند نہیں کی جائیں گی
اب سعودی عرب میں نماز کے اوقات میں دکانیں بند نہیں کی جائیں گی

  



جدہ(مانیٹرنگ ڈیسک) سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے جب سے عنان اقتدار سنبھالی ہے ملک میں ایسی تبدیلیاں لا رہے ہیں جن کااس سے قبل سعودی معاشرے میں تصور بھی محال تھا۔ وہاں ایسی ہی ایک اور تبدیلی آ گئی ہے کہ اب دکانداروں کو پانچ وقت نماز کے لیے دکانیں بند نہیں کرنی پڑیں گی۔ ایکسپریس ٹربیون کے مطابق سعودی حکومت نے کاروباروں کو 24گھنٹے کام کرنے کی اجازت دینے کا فیصلہ کیا ہے تاہم اس کا اطلاق مخصوص کاروباروں پر ہو گا اور انہیں اس کے لیے لائسنس لینا ہو گا، جس کی بعض کاروباروں کے لیے سالانہ فیس مقرر ہو گی۔

رپورٹ کے مطابق سعودی وزارت بلدیات و دیہی امور کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ ”24گھنٹے تجارتی سرگرمیوں کے لائسنس کا اجراءشروع ہو چکا ہے۔ کاروباروں کو چوبیس گھنٹے کھلا رہنے کی اجازت دینے سے ملکی معیشت پھلے پھولے گی۔ اس سے لوگوں کی ضروریات بھی بلا تعطل ہمہ وقت پوری ہوں گی اور ان کا معیار زندگی بہتر ہو گا۔اس کے علاوہ ملک میں اشیاءکی طلب اور رسد میں بھی اضافہ ہو گا۔“

مزید : عرب دنیا