’ مفتی عبدالقوی نے ٹی وی پروگرام میں نرگس کے ساتھ شرکت کی، بعد میں میزبان سے کیا فرمائش کرتے رہے‘ اینکر علی ممتاز نے ایسی کہانی بیان کردی کہ ہنسی نہ رکے

’ مفتی عبدالقوی نے ٹی وی پروگرام میں نرگس کے ساتھ شرکت کی، بعد میں میزبان سے ...
’ مفتی عبدالقوی نے ٹی وی پروگرام میں نرگس کے ساتھ شرکت کی، بعد میں میزبان سے کیا فرمائش کرتے رہے‘ اینکر علی ممتاز نے ایسی کہانی بیان کردی کہ ہنسی نہ رکے

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)معروف ٹی وی اینکر اور صحافی علی ممتاز نے دعویٰ کیا ہے کہ سوشل میڈیا پر مفتی عبدالقوی اور حریم شاہ کی وائرل ہونے والی ویڈیو پلانٹڈ ہے،حریم شاہ کی سہیلی نےمفتی عبدالقوی کو اچانک تھپڑ نہیں مارابلکہ یہ سب کچھ پہلےسےطےشدہ تھااوراس سب کامقصد شہرت حاصل کرنا ہے،میں نے ماضی میں ایک بار مفتی عبد القوی اور اداکارہ نرگس کو ایک پروگرام میں اکٹھے بلایا جس کے بعد مفتی عبدالقوی کئی بارمجھے فون کر کے اداکارہ کا نمبر مانگتے رہے۔

تفصیلات کے مطابق علی ممتاز نے یوٹیوب پر اپنے وی لاگ میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ مفتی عبدالقوی کو میں نے کئی بار اپنے ٹی وی پروگرامز میں بلایا ہے ،مجھے نہیں لگتا تھا کہ یہ عالم دین ہونے کی حیثیت سے اس قسم کی غیر اخلاقی حرکات بھی کرسکتے ہیں،تاہم اب ثابت ہوا ہے کہ  وہ جھوٹ بولنے کے ماہر ہیں اور بات بات پر جھوٹ بولتے ہیں،میں نے آج انہیں اپنے پروگرام میں  گفتگو کے لئے کال کی تو ان کا نمبر دوسری لائن پر مصروف تھا ،کئی بار کوششوں کے بعد جب میری بات ہوئی تو جھوٹ بولتے ہوئے کہنے لگے کہ میں تو نماز پڑھ رہا تھا ، وہ سوالوں کا سیدھا جواب دینے کےلئے باتوں کو گھماتے رہے،کبھی کہتے میں سفر پر ہوں اور میرے موبائل کی بیٹری بند ہو رہی ہے،حالانکہ اگر وہ سفر میں ہیں تو آج کل ہر گاڑی میں چارجنگ کا انتظام ہوتا ہے اور موبائل کی بیٹری ختم ہونے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا ۔

اُنہوں نے کہا کہ ماضی میں ، میں نے ایک ٹی وی پروگرام میں اداکارہ نرگس کو مدعو کیا جبکہ پروگرام میں مفتی عبدالقوی بھی شریک تھے ،پروگرام میں یہ بڑی دینی گفتگو کرتے رہے ،بعد ازاں اگلے روز ان کی مجھے کال آگئی اور پوچھنے لگے کہ پروگرام کیسا رہا ؟میں نے کہا کہ اچھا تھا ،مفتی صاحب نے پھر سوال داغا کہ محترمہ نرگس کی میرے بارے میں کیا رائے تھی ؟میں نے کہا کہ وہ بھی آپ کی تعریف کر رہی تھیں جس پر ان کے جذبے نے اور جوش مارا اور کہا اچھا ، پھر کچھ توقف کے بعد مجھے کہا کہ کیا آپ کے پاس نرگس کا موبائل نمبر ہے تو براہ کرم مجھے دے دیں ،ان کی اس اچانک فرمائش پر میں حیران رہ گیا تاہم میں نے کہا کہ نرگس کا نمبر میں نے کسی کاپی پر لکھا تھا اور وہ کاپی گھر ہے ،جس پر یہ خاموش ہو گئے تاہم کچھ ہی دن گذرے تھے کہ پھر اُن کا فون آ گیا اور کہا کہ آپ نے مجھے محترمہ نرگس کا نمبرنہیں دیا ؟میں نے کہا کہ میں نے نمبر نوٹ کر کےآفس میں رکھ لیا تھا تاہم اب میں اتفاقا گھر پر ہوں ،یہ جس طرح کا شوق رکھتے ہیں یہ اسلام اور علمائے کرام کو بدنام کر رہے ہیں ،ان کے نام کے ساتھ "مفتی" لگتا ہے ،انہیں اپنی داڑھی اور عالم دین ہونے کا ہی لحاظ رکھنا چاہئے۔

علی ممتاز کا کہنا تھا کہ مفتی عبدالقوی کی کوئی مذہبی حیثیت نہیں اور نہ ہی تحریک انصاف میں ان کی کوئی اہمیت ہے،میری آج ہی علامہ طاہر اشرفی سے بات ہوئی ،اُن کا بھی کہنا تھا کہ کئی مرتبہ کہنے کے باوجود وہ اپنی حرکات سے باز نہیں آئے، شہرت کے حصول کے لئے وہ اس طرح کے سٹںٹ کرتے رہتے ہیں،خواتین سے دور رہنے کی بات تو کرتے ہیں لیکن ان سےعورتوں سے دور رہا نہیں جا سکتا ،ایسے شخص کے بارے میں کیا کہا جا سکتا ہے۔ 

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -